خاتون کا مزار قائد پر ڈانس،سوشل میڈیا صارفین کا غم و غصے کا اظہار

بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح رحمتہ اللہ کے مزار پر لڑکی کی رقص کرتے ہوئے ویڈیو، لوگوں کی جانب سے اس پر سخت تنقید کا مظاہرہ،


تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک صارف کی جانب سے ویڈیو شیئر کی گئی جس میں سفید لباس میں ملبوس ایک لڑکی کو مزار قائد پر ڈانس کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ صارف کی جانے سے شیئر کی گئی ویڈیو کے کیپشن میں صارف کا لکھنا تھا کہ یہ مزار قائد ہے۔ جس پر لوگوں کا ڈانس کرتے ہوئے لڑکی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔

لڑکی کی اس اقدام کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے محمد اکرام نامی صارف نے لکھا کہ‏‎اس گستاخ لڑکی کو شاید معلوم نہیں کہ اس وقت قائداعظم محمد علی جناحؒ کے قریبی ساتھی قاضی عیسیٰ کے صاحبزادے سپریم کورٹ کے جج صاحب ہیں وہ اس گستاخی پر لڑکی کے خلاف ازخود نوٹس بھی لے سکتے ہیں


ایک اور المحترم نامی صارف نے اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ‏‎سبحان اللہ
کسی دوسرے گولے کی مخلوق لگ رہی ہے
ویسے بہت افسوس کی بات ہے

عامر سہیل نامی صارف نے سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اپنے بیان میں کچھ یوں کہا کہ ہر تیسری لڑکی حریم شاہ بننے کے چکر میں ہےبہت افسوس ہو رہا ہے کہ ہمارا معاشرہ کس طرف جا رہا ہے

  • پاکستان میں باپردہ جتنی بھی خوبصورت لڑکیاں ھیں اپنی عزت کا تماشہ لگا کر اپنے ماں باپ کی عزت کا جنازہ بڑے دھوم دھام سے اسی طرح ھی نکالتی ھیں کیا یہ ان لڑکیوں میں شامل تو نہی جو کہتی ھیں میرا جسم میری مرضی در فٹے منہ

  • سستی شہرت حاصل کرنے کے لئے کوئی بھی انسان کوئی سی بھی حرکت کر سکتا ھے افسوس ہوتا ھے کوئی بھی اس طرح کی سستی شہرت دیکھ کر

  • یہ کنجر خانہ بند ہونا چاہیے کچھ دن پہلے اسلام آباد میں بھی ایسا ہی ڈانس سڑک پر ہو رہا تھا کیا بکواس ہے یہ اس طرح کے ڈانس یورپ میں نہیں نظر آے آج تک


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >