علی بابا کی جانب سے بھجوائے گئے ماسک کی اصل حقیقت

علی بابا اور جیک ما کی جانب سے پاکستان کے لیے بجھوائے گئے طبی سامان کا کریڈٹ لینے میں سندھ حکومت مصروف

تفصیلات کے مطابق علی بابا فاونڈیشن اور جیک ما فاونڈیشن کی جانب سے کرونا وائرس کی وباء کے پھیلاو کے پیش نظر پاکستان کے شہریوں کو محفوظ رکھنے کے لیے ایک لاکھ فیس ماسک دینے کا اعلان کیا تھا۔ تاہم ایک لاکھ ماسک جن میں این_95 ماسک بھی موجود ہیں منگل کے روز ان کا جہاز لے کر کراچی کے ائیر پورٹ پر پہنچ گیا۔ جہاں محکمہ صحت سندھ کے حکام نے وہاں پہنچ کر ماسک وصول کیے۔

بعد ازاں علی بابا اور جیک ما کی جانب سے پاکستان کے لیے بھیجے گئے فیس ماسک سندھ حکام کی جانب سے وصول کرنے بعد گھٹیا پن کا مظاہرہ کرتے ہوئے سیاست کرنی شروع کر دی گئی کہ جیک ما اور علی بابا کی جانب سے بھیجوائے گئے ماسک تو ہمیں بھیجے گئے تاہم سندھ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ بھیجے گئے ماسک پنجاب، بلوچستان ، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں سندھ حکومت کی جانب سے تقسیم کیے جائیں گے۔

تاہم، اس مشکل صورتحال میں بھی پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے کریڈٹ لینے کے لیے موصول کیے گئے فیس ماسک پر سیاست کرتے ہوئے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے لکھنا ہے کہ ” سندھ کے عوام جیک ما اور ری پبلک آف چائنہ کے پانچ لاکھ این_95 ماسک بھیجے جانے پر بے حد مشکور ہیں۔ جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی اور وزیراعلی سندھ نے 60% دوسرے صوبوں کے دینے کا فیصلہ کیا ہے”

علی بابا اور جیک ما کی جانب سے دئیے گئے ماسک کی اصل حقیقت

چائنہ کی پاکستان کے لیے ایمبیسی کی جانب سے کیے گئے ٹویٹ نے کھول کر رکھ دیا جس میں انہوں نے لکھا کہ ” علی بابا فاونڈیشن اور جیک ما فاونڈیشن کی جانب سے پاکستان کو اس مشکل ترین صورتحال سے نمٹنے میں مدد دینے کے لیے طبی سامان اپنے گارگو جہاز میں لوڈ کردیا گیا ہے اور این_95 ماسک کی پہلی کھیپ آج کراچی کی بندرگاہ پر پہنچ جائے گی”

جیک ما فاؤنڈیشن کے لیٹر سے بھی یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ علی بابا فاؤنڈیشن یہ ماسک وفاقی حکومت کو دے رہی ہے۔ لیٹر میں کہیں بھی سندھ حکومت کا نام نہیں لکھا۔

علی بابا گروپ کی جانب سے کئے گئے ٹویٹ میں این ڈی ایم اے کا ذکر ہے۔این ڈی ایم اے وفاقی حکومت کا ادارہ ہے جو وزیراعظم عمران خان کے زیراثر کام کررہا ہے۔

کچھ روز قبل مشیر صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے بھی کہا تھا کہ چین سے 5 لاکھ ماسکس پاکستان پہنچ رہے ہیں۔

پیر کے روز چئیرمین این ڈی ایم اے ندیم افضل نے بھی ان ماسکس کی اصل حقیقت سے صحافیوں کو آگاہ کیا تھا۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل علی بابا کے مالک جیک ما نے ٹویٹ کیا تھا کہ وہ پاکستان سمیت مختلف ممالک کو سرجیکل ماسک اور آلات بھیج رہے ہیں۔ اس میں نیپال، سری لنکا ، بنگلہ دیش کے نام بھی شامل ہیں۔


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >