طاہر شاہ کی ’’تاریخ پہ تاریخ‘‘ پر سوشل میڈیا صارفین کے دلچسپ تبصرے

"طاہرشاہ گاناریلیزکریں،شاید کرونا کی موت ایسے ہی لکھی ہو”، "اینجل پلیز ہمیں اور نہ تڑپاؤ”، "کرونا کا اعلان آگیا”۔۔ طاہر شاہ کے نئے گانے کے اعلان پر سوشل میڈیا صارفین کے دلچسپ اور مزاحیہ تبصرے

طاہرشاہ نے دسمبر2019 میں اپنے ٹوئٹر پیغام میں اعلان کیا تھا کہ ان کا نیا گانا بہت جلد آرہا ہے۔تقریبا ڈیڑھ ماہ بعد 13 فروری کو ویلنٹائن ڈے سے ایک روز قبل طاہر شاہ نے گانے کے بجائے اس کی پہلی جھلک شیئر کی جو ویڈیو نہیں بلکہ دل کی شکل کی ایک تصویر تھی۔

ٹویٹ میں بتایا گیا تھا کہ گانے کا نام ’’فرسٹ لک ‘‘ ہےجسے آئندہ ماہ 14 مارچ کو ریلیز کیا جائے گا۔ 14 مارچ آئی اور گزربھی گئی لیکن انکے مداح طاہر شاہ کا گانا سننے سے محروم رہے۔

اسکے بعد طاہرشاہ نے ایک اور تاریخ دیدی اور اعلان کیا کہ نیا گانا 3 اپریل کو ریلیز کیا جائے گا۔

دو اپریل کو طاہر شاہ نے ایک اور تاریخ دیتے ہوئے اعلان کیا کہ ان کا گانا 10 اپریل کو ریلیز ہوگا۔

جس پر سوشل میڈیا صارفین کا صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا اور طاہرشاہ پر طنز کی بوچھاڑ کردی۔۔ سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ ہمیں اور کتنا تڑپاؤ گے اینجل، کسی نے کہا کہ تاریخ پہ تاریخ، کسی نے کہا کہ ایک طرف کرونا نے تو دوسری طرف طاہر شاہ تاریخ پہ تاریخ دیکر ذہنی طور پر ٹارچر کررہا ہے۔ کسی نے کہا کہ پتہ نہیں آپکا گانا ریلیز ہونے تک ہم زندہ رہیں گے یا نہیں۔

ایک سوشل میڈیا صارف نے تنگ آکر کہا کہ مار بھی ڈالو ناں اینجل ، تم بھی ہمیں تڑپا تڑپا کے

ایک اور سوشل میڈیا صارف نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ ہم کو مار ڈالو، ہمیں زندہ مت چھوڑنا، بھائی 10، 20 زیادہ لے لو لیکن ہمیں اتنا تڑپاؤ مت

مزید ایک شخص نے کہا کہ 10 اپریل کو کرونا کی ویکسین آرہی ہے۔ کرونا کی موت کا دن 10 اپریل ہے۔

عثمان نامی صارف نے کہا کہ سر آپ ریلیز کریں شائد کرونا کی موت ایسے ہی لکھی ہو

ایک اور صارف نے کہا کہ کرونا کا علاج یہی ہے۔ اللہ کا شکر ہے

طاہر نامی شخص نے خوشی کے انداز میں کہا کہ کرونا کو شکست دینے کیلئے بندہ میدان میں آگیا ہے۔

ایک اور سوشل میڈیا صارف نے سنی دیول کا "تاریخ پہ تاریخ” والا کلپ شئیر کیا۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More