غریب لوگوں کو کھانا کھلانے دیں، اقرار الحسن کی وزیراعلی سے اپیل

نامور ٹی وی اینکر اقرار الحسن نے حکومت، ڈی جی رینجرز اور دیگر حکام سے مفت کھانا کھلانے کے مرکز پر پابندی ہٹانے کی اپیل کردی۔

ٹی وی ہوسٹ اقرار الحسن نے ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کی جس میں انہوں نے کہا کہ بہت دکھ اور افسوس سے یہ ویڈیو بنا رہا ہوں کیونکہ یہاں جس جگہ پر میں موجود ہوں روزانہ 5 سے 6 ہزار غریب لوگ کھانا کھاتے تھے جس کا خرچ میری اپنی جیب سے ادا ہوتا تھا لیکن قریب کے کچھ بنگلے والوں نے ویڈیو بنا کر ہماری شکایت لگادی جس کے بعد رینجرز اور پولیس نے غریبوں کو کھانا کھلانے کا یہ سلسلہ رکوا دیا۔

اقرار الحسن نے ویڈیو میں کہا کہ” یہاں آنے والے تمام لوگوں میں تین فٹ کا فاصلہ رکھا جاتا تھا، ان کے ہاتھ سینی ٹائزر سے صاف کروائے جاتے تھے، ان میں ماسک تقسیم کیے جاتے تھے تاکہ کسی ایک سے یہ وبا ء دوسرے کو منتقل نہ ہوجائے یہاں کھانا کھانے والے وہ لوگ تھے جو ان بنگلوں میں کام کرتے تھے لیکن وہاں کے مالکان نے انہیں نوکریوں سے نکال دیا اور اب وہ اپنے گھروں تک جانے کے قابل بھی نہیں رہے بلکہ وہ ایک وقت کے کھانے کے بھی محتاج ہوگئے ہیں تو میں انفرادی طور پر ان کیلئے کھانے کا یہ سلسلہ چلا رہا تھا

لیکن بنگلے والوں نے شکایت کردی کہ یہاں غریب لوگ کھانا کھاتے ہیں اس سلسلے کو بند کروایا جائے، میری ان لوگوں سے وزیراعلی سے ڈی جی رینجرز سے اپیل ہے کہ خدارا یہ غریب لوگ ایک ایک وقت کے کھانے کیلئے دھکے کھارہے ہیں ہم کسی سے کچھ مانگ نہیں رہے ہماری اپنی رضاکاروں کی ٹیم کورونا سے بچاؤ کی تمام حفاظتی انتظامات کو یقینی بناتی ہے غریب کو ایک وقت کھانا کھلانے کا سلسلہ جاری رکھنے کی اجازت دی جائے”۔

انہوں نے کہا میں اس بات کی گارنٹی دیتا ہوں کہ یہاں اس میدان میں دو گھنٹے میں ہم ہزاروں لوگوں کو کھانا کھلاتے ہیں میری گارنٹی ہے یہاں کسی بھی قسم کی قانون کی خلاف ورزی نہیں ہوگی، کورونا سے بچاؤ کا کوئی حفاظتی اقدام بائی پاس نہیں ہوگا خدارا اس سلسلے کو جاری رہنے دیا جائے، یہ بھوکے لوگ کہاں جائیں گے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >