ویڈیو: جوہر ٹاؤن میں ایل ڈی اے ،پولیس نے گھر گرا کر معذور بچوں کو باہر پھینک دیا

نئے پاکستان کا چہرہ، ایل ڈی اے انتطامیہ نے ذہنی طور پر معذور بچوں کو گلی میں پھینک کر مکان گرا دیا۔

Welcome to Naya Pakistan. Where special needs children are thrown on the street and their house demolished.یہ ہے نیا پاکستان، جس میں معذور بچوں کو سڑک پر پھینک کر ان کے گھر گرائے جا رہے ہیں۔ جوہر ٹاؤن میں آج یہ افسوسناک واقعہ پیش آیا۔ بچے پیدائشی ذہنی معذور اور گھر کا کیس عدالت میں چل رہا تھا مگر قبضہ گروپوں نے ایل ڈی اے اور پولیس کو ساتھ ملا کر بلڈوزر چلا دیئے۔

Posted by Ali Moeen Nawazish on Saturday, June 20, 2020

تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقے جوہر ٹاؤن میں دل دہلا دینے والا ایک افسوس ناک واقعہ پیش آیا، جس میں پیدائشی طور پر تین ذہنی معذور بچوں کو تپتی دھوپ میں سڑک پر پھینک کر ایل ڈی اے اہلکاروں نے پولیس کی مدد سے ان کا گھر گرا دیا۔

ذہنی طور پر معذور بچوں کا گھر گرانے اور ان کو گھر سے باہر سڑک پر پھینکنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے، وائرل ہونے والی ویڈیو میں واضح طور پر ایل ڈی اے اور پولیس کو معذور بچوں کو ان کے گھر سے باہر پھینکتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے، قبضہ مافیہ کی جانب سے معذور بچوں کو جب گھر سے باہر پھینکا جا رہا تھا تو معذور بچے روتے ہوئے دہائی دیتے رہے لیکن پتھر دل اہلکاروں کو ان پر رتی برابر ترس نہ آیا۔

خبر رساں ادارے کے مطابق معذور بچوں کے گھر کا کیسا بھی عدالت میں چل رہا ہے، جس کا فیصلہ آنا ابھی باقی ہے، لیکن ایل ڈی اے اور پولیس نے معذور بچوں کے گھر پر قبضہ کرتے ہوئے بلڈوزر چلا دئیےاور گھر کو منہدم کردیا۔

اس واقعہ پر ایل ڈی اے نے نوٹس لے لیا ہے ۔ ایل ڈی کا کہنا تھا کہ پلاٹ کا قبضہ واگزار کروانے کے دوران معذور بچوں کو تکلیف دینے کی اطلاعات کا نوٹس لیتے ہوئے LDA کے وائس چیئرمین ایس ایم عمران نے DG LDA کو تحقیقات کے بعد ایکشن لینے کی ہدایت کی ہے ۔

ایل ڈی اے کے مطابق ابتدائی رپورٹ کےمطابق کیو بلاک جوہر ٹاؤن میں واگزار کروایا جانے والا پلاٹ نمبر 950 ادارے کی ملکیت ہے

  •  سیاسی بندر بانٹ کرنیوالے یہ 

    ایل ڈی اے خوف خدائی مدنظر رکھتے ھوئے اگر ایک پلاٹ ان معذوروں کیلئے وقف کر دیتے تو کیاقیامت آجاتی؟ 

    دنیا فانی ھے

    صلہ رحمی بھی انسانیت کا جزو ھے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >