فرقہ ورانہ ٹرینڈز میں بھارت ملوث تھا، ڈاکٹر ارسلان

فرقہ ورانہ ٹرینڈز میں بھارت ملوث تھا، ڈاکٹر ارسلان

ملک بھر میں فرقہ واریت پر سوشل میڈیا پر بحث سرگرم ہے، سوشل میڈیا پر بھی کئی ٹرینڈز چلے، ان ٹرینڈز کے حوالے سے فوکل پرسن برائے ڈیجیٹل میڈیا ڈاکٹر ارسلان کا کہنا ہے کہ چند دن پہلےہونےوالےفرقہ وارنہ ٹرینڈزمیں حصہ لینےوالےاسی فیصدکےقریب اکاؤنٹس بھارتی تھے۔ کیونکہ ہمارے ملک میں فرقہ واریت پر جو ویڈیوز چلیں اس کے بعد جو ہیش ٹیک چلا میں اس میں زیادہ تر بھارتی اکاؤنٹس تھے۔

ڈاکٹر ارسلان نے اس حوالے سے ویڈیو میں ایک میپ بھی دکھایا اور بھارتی اکاؤنٹس بھی دکھائے، ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ ہم کسی سیاسی جماعت کیخلاف کارروائی کرنا نہیں چاہتے ۔

ڈاکٹر ارسلان کا کہناتھا کہ ہم چاہتے ہیں کہ سیاسی جماعتیں خود اپنے کارکنوں کو اس حوالے سے سمجھائیں کہ وہ پارٹی لائن سے ہٹ کر کوئی کام نہیں کریں لیکن اگر مستقبل میں یہ سب نہیں روکا گیا تو پھر ہمیں لگے گا کہ پارٹی قیادت ہی اس طرح کروا رہی ہے۔

ڈاکٹر ارسلان نے کہا کہ آن لائن جوبات بھی ہوتی ہےاسکااثربحرحال آف لائن دنیا تک جاتاہے۔اس لئےسب کوذمہ داری کا مظاہرہ کرکےپاکستان کےباہر سےکسی کو ملکی حساس معاملات پرانتشارپھیلانےکی اجازت نہیں دینی چاہئے۔

  • یہ تو ٹوئیٹر پر ٹرینڈ تھے جس کے پیچھے بھارت تھا جیڑی پین یکی زلفی بخاری نے کیتی اسلام آباد وچ آصف رضا علوی نوں بلا کے جنے حضرت ابوبکر صدیقؓ دی گستاخی کیتی فیر ٹکٹ کٹا کے لندن پجوا دیتا اوندے تے قانونی کاروائی کدوں ہوے گئی

  • We, Pakistanis, must use their brain to know what is right or wrong? I can judge easily who supports Pakistan or who opposes Pakistan? I know that ANP,KPMAP,PTM are clearly against Pakistan and they are defaming and harming Pakistan openly.

  • سب سے اہم بات
    اینٹی شیعہ اور اینٹی سنی
    دونوں ٹرینڈز میں فیولنگ
    انڈیا سے ہو رہی تھی.
    باقاعدہ نیو اکاؤنٹ لانچ کیے گئے تھے
    یورپ سے ٹویٹر ہینڈلز ملوث تھے
    اور نوے فیصد فیک اکاؤنٹ تھے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >