شہباز شریف کی گرفتاری سے متعلق حامد میر کے یوٹرن

شہباز شریف کی گرفتاری سے متعلق حامد میر کے یوٹرن

شہباز شریف کی گرفتاری سے متعلق صحافی حامد میر نے ایک بار پھر اپنے سابقہ بیان سے یوٹرن لے لیا، حامد میر کی جانب سے شہباز شریف کی گرفتاری سے متعلق ایک کے بعد ایک دعوی کیا گیا تھا، لہذا انہوں نے اپنے سابقہ دعوؤں کی خود ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے نفی کردی۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کی گرفتاری کے کچھ دیر بعد حامد میر نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ "قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو گرفتار کر لیا گیا اے پی سی میں نواز شریف کی تقریر کے بعد شہباز شریف کی گرفتاری یقینی تھی کیونکہ نون میں سے شین باہر نہیں نکل رہی تھی لہذا شین کو اندر کر دیا گیا”

 

حامد میر کا اپنے مذکورہ ٹویٹ سے قبل ایک نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف کی گرفتاری کے حوالے سے دعویٰ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ "شہباز شریف صاحب اپنی مرضی سے گرفتار ہوں گے، موقع اور ٹائمنگ کا فیصلہ بھی خود شہباز شریف صاحب نہیں کرنا ہے”۔

حامد میر نے اپنے مذکورہ دعوے سے پہلے بھی یہ دعوی کیا تھا کہ "مولانا فضل الرحمان کے دھرنے پر نوازشریف کی پوزیشن بہت واضح ہے اور نواز شریف کی جانب سے جیل سے بھیجا گیا خط بھی مولانا فضل الرحمان کو کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پہنچا چکے ہیں، جس میں انہوں نے یقین دہانی کروائی ہے کہ ہماری پارٹی اور ہمارے کارکنان آپ کے ساتھ ہیں، لیکن اس کے برعکس شہباز شریف اور ان کے ساتھی کہہ رہے ہیں کہ ابھی ہم نے یہ فیصلہ کرنا ہے کہ ہم نے کیا کرنا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >