شاہد آفریدی کی 2011 ورلڈ کپ سیمی فائنل سے متعلق جیو نیوز کی خبر پر وضاحت

شاہد آفریدی کی 2011 ورلڈ کپ سیمی فائنل سے متعلق جیو نیوز کی خبر پر وضاحت

شاہد آفریدی نے 2011 ورلڈ کپ سیمی فائنل میں شکست کا ذمے دار مصباح الحق کو ٹھہرائے جانے سے متعلق اپنے بیان کی تردید کرتے ہوئے وضاحت کردی۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد خان آفریدی نے متعلق ایک خبر جیو نیوز پر چلائی گئی جس میں کہا گیا کہ شاہد آفریدی نے عرب نیوز کو دیئے گئے اپنے انٹرویو میں کہا ہے کہ 2011 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں شکست مصباح الحق کی سست بیٹنگ کی وجہ سے ہوئی۔

شاہد آفریدی نے اپنی ٹویٹ میں عرب نیوز کی ویب سائٹ کا سکرین شاٹ لے کر شیئر کیا اور کہا بد قسمتی سے میرے بیان کو غلط طریقے سے پیش کیا گیا، 2011 میں ہمیں شکست اپنی بیٹنگ کی ناکامی کی وجہ سے ہوئی، مجھ سمیت تمام تر بیٹسمین ہدف کو حاصل کرنے کا پریشر نہیں لے سکے۔ کسی بھی بیٹسمین کو انفرادی حیثیت میں ذمہ دار نہیں ٹھہرایا۔

جیو نیوز نے اپنی خبر میں کہا کہ شاہد آفریدی کا کہنا ہے کہ مصباح الحق نے 2011 ورلڈ کپ سیمی فائنل میں بھارت کے خلاف سست بیٹنگ کرکے جیتنے کا موقع گنوایا۔

جبکہ عرب نیوز کی خبر میں لکھا گیا  تھا کہ شاہد آفریدی نے کہا "وہ ایک بہترین موقع تھا جو مجھے لگتا ہے ہم نے کھودیا، بہت سے لوگ کہتے ہیں کہ مصباح نے سست بیٹنگ کی، مصباح ایسے ہی کھیلتے ہیں ان کے کھیلنے کا طریقہ ہی یہ ہے، وہ کریز پر سیٹ ہونے کیلئے وقت لیتے ہیں اور وہ گیم کو آخر تک لے کر جاتے ہیں، مگر اس میچ کی صورتحال کا تقاضہ تھا کہ سکور بورڈ کو آگے بڑھایا جائے”۔

  • کاش تم نے ایسا ہی کہا ہوتا جو کہ سمجھا گیا ہے۔ مصباح نے صرف سیٹل ہونے کے لئے وقت نہی لیا تھا بلکہ وہ پہلے آدھے پونے گھنٹے کے بعد بھی جب ہر اور میں آٹھ رنز درکار تھے تو وہ بلاک کئے جا رہا تھا۔ اور وہ آخر تک ایسا ہی کرتا رہا تھا۔ اور جب میچ ہاتھ سے نکل چکا تھا اور آسکنگ ریٹ بیس پر پہنچ چکا تھا تو اس نے دو تین چھکے لگا کر اپنا سٹرائیک ریٹ کچھ بہتر کر لیا تھا۔ یہ کہنا کہ مصباح تو کھیلتا ہی ایسے تھا بھی شریک جرم ہونے کے برابر ہے کیونکہ اس صورت حال میں جیسا بھی اور جو بھی پلیئر ہوتا وہ چاہے آؤٹ ہی ہو جاتا لیکن مارنے کی کوشش ضرور کرتا۔

  • انگلش سیکھ لے الو کے پٹھے۔ ٹویٹ میں عرب نیوز کا سکرین شاٹ بھی شامل ہے جس میں واضح طور پر مصباح الحق کا نام پڑھا جا سکتا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >