بھارتی فیک نیوز پر پاکستانی سوشل میڈیا صارفین کا دلچسپ میمز شئیر کرکے جواب

پاکستان کا جھوٹا پروپیگنڈا پاکستانی سوشل میڈیا صارفین کیلئے مذاق بن گیا۔۔ کراچی میں عمارت میں ہونے والے گیس دھماکے کی خبروں کو اداروں کے درمیان بڑی لڑائی قرار دیا تو سوشل میڈیا کے صارفین نے بھارت کا خوب "توا” لگایا بلکہ بھارتی سوشل میڈیا صارفین کو بھی ماموں بناتے رہے۔

گزشتہ روز بھارتی میڈیا نے جھوٹ اور منفی پراپیگنڈے میں اپنی ہی حکومت کو پیچھے چھوڑ دیا۔ پاکستان مخالف بے بنیاد، جعلی اور منفی خبروں کو پر لگادیے۔ ایسے جھوٹ اور افسانے گھڑے کہ سوشل میڈیا صارفین کے آپریشن کے بعد بھارتی میڈیا کی اصلیت پوری دنیا کے سامنے عیاں ہوگئی۔

کراچی کی صورت حال پر جعلی، بے بنیاد اور جھوٹ پلس پر مبنی خبریں چلانے والوں کو نہ صرف رسوائی کا سامنا کرنا پڑا بلکہ بھارتی میڈیا اور اسکے حامیوں نے اپنا بھی مذاق بنوالیا۔ سوشل میڈیا صارفین نے ایسی طبیعت صاف کی کہ بھارتی میڈیا اپنا ہی منہ چھپاتا نظر آیا۔

پاکستانی سوشل میڈیا صارفین نے #CivilWarInPakistan اور #CivilWarInKarachi کے ٹرینڈز چلائے جسے بھارتی سوشل میڈیا صارفین یہ گمان کرتے رہے کہ یہ ٹرینڈ بھارت کی طرف سے چلا ہے اور وہ بھی اس ٹرینڈ میں پاکستانی سوشل میڈیا صارفین کی میمز کو سچ سمجھ کر ری ٹویٹ کرتے رہے۔

بھارتی میڈیا نے یہ خبر چلائی کہ کراچی کے علاقے گلشن باغ میں فوج اور پولیس کے درمیان تصادم ہوا ہے جبکہ کراچی میں ’گلشن باغ‘ نامی کوئی علاقہ ہی نہیں ہے۔جس پر بھارتی میڈیا کبھی گلستان جوہر، کبھی گلشن اقبال کہتا رہا۔

پاکستانی سوشل میڈیا صارف نے عامر لیاقت کی ایک وائرل ہونیوالی تصویر کی اور کہا کہ پولیس اور فوج کے درمیان سول وار میں پہلے فوجی کی شہادت ہوگئی ہے تو نہ صرف بھارتی سوشل میڈیا صارفین بلکہ پاکستان دشمن طارق فتح اسے سچ سمجھتے رہے اور اسے ری ٹویٹ کرتے رہے

صرف یہی نہیں ڈان کے صحافی ضرار کھوڑو کی کمانڈو کی وردی میں ملبوس ایک تصویر شئیر کرکے ایک صارف نے کہا کہ آئی ایس آئی ونگ کے جنرل ضرارالدین کراچی پولیس کے خلاف گلشن باغ آپریشن کی قیادت کررہے ہیں جسے بھارتی سوشل میڈیا صارفین سچ مان گئے۔

سوشل میڈیا صارفین نے گزشتہ روز مختلف میمز شئیر کرکے بھارت کی خوب مٹی پلید کئے رکھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >