ن لیگی ایم این ایز نوازشریف کا ساتھ چھوڑگئے؟احسن اقبال کے ٹویٹ پر سوالات اٹھ گئے

پولیس والوں نے مجھے پہنچاننے سے انکار کردیا، سابق وزیر داخلہ احسن اقبال

احسن اقبال کے معنی خیز ٹویٹ پر کئی سوالات اٹھ گئے۔ کہتے ہیں کہ وقت آ گیا ہے کہ ان نام نہاد ایلیکٹیبلز کا سیاست سے صفایا کیا جائے جو ذرا سی مخالف ہوا دیکھ کر پارٹی کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے ہوئے وفاداریاں تبدیل کر لیتے ہیں۔

کچھ روز قبل ذرائع کے حوالے سے خبر آئی کہ ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ کچھ روز قبل ہونیوالے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں 84 میں سے صرف 28 رہنما شریک ہوئے جس دوران مریم نواز کی پالیسی سے سینئر رہنما ناراض دکھائی دیئے جبکہ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی وضاحتیں دیتے رہے۔

نجی چینل نے خبر بریک کرتے ہوئے کہا کہ مریم نواز کی طرف سے یکطرفہ فیصلوں پر شدید گرما گرمی ہوئی ہے، مریم کی پالیسی سے ن لیگ کے سینئر رہنما ناراض دکھائی دیئے اور اراکین نے شکوہ کیا کہ مریم نواز کسی بھی فیصلے سے قبل پارٹی کو اعتماد میں نہیں لے رہی ہیں۔ اراکین کا کہناتھاکہ ہدایات لندن سے ہی لینی ہیں تو ہمیں بلانے کا کیا فائدہ، یہ بھی واضح نہیں ہوتا کہ پارلیمنٹ میں کیا پالیسی اپنانی ہے۔

اس خبر کے بعد احسن اقبال کے ایک ٹویٹ نے کئی سوالات اٹھادئیے۔ احسن اقبال نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ وقت آ گیا ہے کہ ان نام نہاد ایلیکٹیبلز کا سیاست سے صفایا کیا جائے جو ذرا سی مخالف ہوا دیکھ کر پارٹی کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے ہوئے وفاداریاں تبدیل کر لیتے ہیں-

احسن اقبال نے ن لیگی کارکنوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن کے کارکن ایسے لوگوں پہ نظر رکھیں- PMLN کی پہچان اب اس کے مخلص اور جانثار اراکین ہیں-

احسن اقبال کے اس ٹویٹ پر سوشل میڈیا صارفین نے دلچسپ ردعمل کا اظہار کیا، احسن اقبال کے ٹویٹ کو قوٹ کرکے سوشل میڈیا صارفین نے دعویٰ کیا کہ ہواؤں کارخ واقعی تبدیل ہورہا ہے۔ اسی لئے کچھ روز قبل ن لیگ کے پارلیمانی اجلاس میں 84 میں سے 28 آئے اور جو آئے بھی وہ بھی اپنی ہی قیادت سے ناراض دکھائی دئیے۔

اظہر مشوانی نے وہ خبر شئیر کی جس کے مطابق ن لیگ کے پارلیمانی اجلاس میں 84 میں سے 28 رہنما شریک ہوئے اور طنز کیا کہ بنتا ہے باس۔۔

صحافی مبشرزیدی نے تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ جہاں سے ان کا سافٹ ویئر ابڈیٹ ہوتا ہے اصل نظر وہاں ڈالنی چاہیے

عبید بھٹی نے لکھا کہ امیر مقام, طلال چوہدری, دانیال عزیز, زاہد حامد اور جملہ لوٹوں کیلیے پیغام۔

احمد ندیم کا کہنا تھا کہ یہ وہ لوگ ہیں جن کی سیاست ہمیشہ الیکٹیبلز کے گرد ہی گھومتی رہی ہے، وہ آج اس کے خلاف بول تو رہے ہیں- مگر ان کے ہاتھ میں ویسے اب کچھ ہے ہی نہیں- یہ صرف کھوکھلے ڈائیلاگ ہیں-

ایک سوشل میڈیا صارف نے مشورہ دیا کہ سب سے پہلے شہباز شریف کے اوپر نظر رکھیں۔

ثناء آصف نے کہا کہ اس کی ذہنی حالت چک کرو خود کی پارٹی ٹوٹ رہی ہے، ان خود کے بیچ اتفاق نہیں ہے، کوئ مریم نواز سے اپ سیٹ ہے تو کوئی شین سے تو کوئی ن سے ۔ خود کو گرنے سے بچاؤ پھر بعد میں حکومت کا صفایا کرنے کی بات کرنا۔

آفتاب نے کہا کہ لوگ ڈوبتی ہوئی کشتی سے چھلانگیں لگا رہے ہیں ۔ الیکٹیبز اور چھانگا مانگا کی سیاست کی بنیاد ہی نواز نے رکھی ۔ مشرف دور سے بھی کچھ نہیں سیکھا اور آکر ق لیگ میں مانیکا کی قیادت میں فارورڈ بلاک بنایا ۔ مشرف سےحلف لیا

ایم جے خان نے کہا کہ ن لیگ نہ کبھی نظریاتی جماعت تھی نہ ہے یہ ہمیشہ سے مفاد پرست ایلیکٹیبلز کا ایک ٹولہ ہے جو ہوا کا رخ دیکھ کر اپنا قبلہ بدل لیتے ہیں. گلہ کیسا؟

شائن سٹائن نے طنز کیا کہ مسلم لیگ ن کے کارکن وفاداریاں بدلنے والوں پر نظر رکھیں جبکہ ہم انھیں الیکشن کے لئے ٹکٹ دیتے رہیں گے۔

خرم محمود نے لکھا کہ ہاں جی نظر آنا شروع ہوگیا تم لوگوں کو بھی، اچھی بات ہے! تمھارے بھگوڑے لیڈر نے کھل کر سامنے آکے تم لوگوں کی منجھی ٹھوکی ہے۔ اداروں کے خلاف دشمن کی زبان استعمال کر کے تم لوگوں کا بیڑا غرق کیا ہے۔ ن لیگ عبرت کا نشان بننے جا رہی ہے، انشاللہ!

  • Nawaz with lowest IQ, always shoots at his own foot….his daughter, 420 Maryam Safdar, with equally empty brain is no difference.
    This is the beginning of the end of "Pakistan Money Laundering Network”….PMLN…Inshallah.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >