طویل پاور بریک ڈاؤن پر زیدحامدشرلیاں چھوڑتے اور شازشی تھیوریاں پیش کرتےہوئے

نیشنل گرڈ میں خرابی کے باعث ملک بھر میں بلیک آؤٹ ہوا تو زید حامد نے پھر نئی شُرلی چھوڑ دی

زید حامد کو دفاعی امور اور بالخصوص افغان امور کا ماہر کہا جاتا ہے وہ مختلف مواقع پر سوشل میڈیا پر ایسی باتیں اور پیش گوئیاں کر دیتے ہیں جو سچی تو کبھی ثابت نہیں ہوئیں البتہ ایسی باتوں سے ان کا مذاق خوب اڑایا جاتا ہے۔

گزشتہ رات نیشنل گرڈ میں خرابی کے باعث فریکوئنسی زیرو ہوئی اور اسی وجہ سے ملک بھر میں بجلی بند کر دی گئی جس کو ابھی تک مکمل طور پر بحال نہیں کیا گیا اس صورتحال پر زید حامد نے سب سے پہلے یہ افواہ اڑائی کہ پاکستان بھر میں بجلی بند ہے اور پاکستان ایئر فورس ریڈ الرٹ پر ہے اس لیے ہر قسم کی صورتحال کے لیے تیار ہو جائیں۔

اس ٹوئٹ کے کچھ دیر بعد شاید انہیں اپنی غلطی کا احساس ہوا اور ایک اور ٹوئٹ کر کے صورتحال کو سنبھالنے کی کوشش کرتے ہوئے کہا کہ افواہوں پر کان نہ دھریں۔ گھروں میں رہیں اور پوری احتیاط کریں۔ جب تک واضح صورتحال نہ معلوم ہو، احتیاط بہترہے۔ کسی کو وجہ معلوم نہیں ہے اس لیے کسی بات پر اعتبار نہ کریں جب تک سرکاری بیان نہ آے۔

انہوں نے سوشل میڈیا صارفین کو پاکستان کے لیے دعا کرنے کا بھی کہا اور آخر میں ملک کے حق میں نعرہ بھی لگایا۔

زید حامد کے پہلے ٹوئٹ کے جواب میں معاون خصوصی برائے سیاسی روابط ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ کبھی سنسنی پھیلانے سے باز بھی رہا کریں آپ تو ہر وقت فلم بنے رہتے ہیں۔

جس پر زید حامد نے اظہار ناراضی کرتے ہوئے کہا کہ جب ناتجربہ کار نوجوان کھلنڈرے ملک کے حکمران ہوں، تو ان سے یہ توقع کرنا عبث ہے کہ غیر معمولی صورتحال میں احتیاط کا دامن تھامیں گے۔ ہر سنجیدہ بات کو کھیل اور تماشے میں اڑا دینا ان کی تربیت ہے۔ یہ جانتے ہوئے بھی کہ دشمن کسی بھی وقت کوئی کارروائی کر سکتا ہے اور ملک میں دہشتگردی ہے۔

ٹوئٹر محاذ پر مورچہ سنبھالے زید حامد پوری رات شرلیاں چھوڑتے رہے اور ایک اور ٹوئٹ میں کہا کہ کسی ملک کے پاور گرڈ کو بند کیا جانا بھی کسی سائبر حملے کا نتیجہ ہو سکتا ہے۔

انہوں نے یہ امید بھی ظاہر کی کہ پاکستان میں اس طرح بلیک آؤٹ ہونا کوئی سائبر اٹیک نہیں ہو گا۔ مگر ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جب بھی دشمن پاکستان پر حملہ کرے گا وہ ہمارے پاور گرڈ کو بھی نشانہ بنائے گا۔

انہوں نے اپنے موقف کی حمایت میں پاکستان ڈیفنس کے نام سے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کی ایک ٹوئٹ شیئر کی جس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان ایئر فورس چوکنا ہے اس لیےپاکستانی آرام کی نیند سو سکتے ہیں۔

اس ٹوئٹ کا حوالہ دیتے ہوئے زید حامد نے کہا کہ مگر بے شرموں اور جاہلوں کو یہ سمجھ نہیں آئے گا کہ کیوں ہم نے پاک فضائیہ سے کہا کہ انتہائی محتاط ہو جاؤ اور پاک فضائیہ ریڈ الرٹ ہو بھی گئی۔

انہوں نے ڈاکٹر شہباز گل کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ دشمن کی چالوں کو سمجھتے ہیں نہ خطرات سے آگاہ ہیں۔ صرف خر مستی!

اس کے بعد زید حامد نے ایک اور ٹوئٹ کیا کہ پاکستان اسٹریٹجک فورم نامی سوشل میڈیا پلیٹ فارم محب وطن پاکستانی بن کر کام کر رہا ہے مگر یہ حسین حقانی یا ہندوتوا نظریے کا کوئی پیروکار چلا رہا ہے۔

اس سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے خلاف انہوں نے اس لیے بات کی کیونکہ اس کی جانب سے یہ مطالبہ کیا گیا تھا کہ زید حامد کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہونا چاہیے۔ کیونکہ وہ جھوٹی خبریں پھیلا رہے ہیں۔

اس ساری صورتحال میں جب زید حامد کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تو انہوں نے خود پر تنقید پر عدم برداشت ظاہر کرتے ہوئے ایک اور ٹوئٹ کیا کہ اگر کوئی ان پر تنقید کرے گا یا ان کے دعوؤں کو جھوٹ کہے کر گستاخی بے ادبی اور بے شرمی کا مظاہرہ کرے گا تو اسے فوری بلاک کر دیا جائے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >