ابصار عالم نے گھر کے باہر موٹرسائیکل ٹھیک کرنے والے شخص کو جاسوس قرار دے دیا

سابق چیئرمین پیمرا اور صحافی ابصار عالم نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ ایک ایک ایسے شخص کی تصاویر شیئر کیں جو ان کے گھر کے باہر صبح صبح موٹر سائیکل ٹھیک کر رہا تھا۔ ان تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ شخص اس جگہ کھڑی موٹرسائیکل کے پہلے اوپر بیٹھا تھا جبکہ بعد میں نیچے اتر کر اسے ٹھیک کرنے کی کوشش کرنے لگتا ہے۔

ابصار عالم نے اس واقعے سے متعلق کہا کہ یہ شخص صبح8 بجے سے ان کے گھر کے باہر موٹرسائیکل ٹھیک کر رہا ہے مگر ان کا دعویٰ ہے کہ یہ کوئی جاسوس ہو سکتا ہے۔ کیونکہ انہوں یہ بھی کہا کہ ایسے جاسوسوں کو چاہیے کہ وہ ملک کے اندر اپنے لوگوں کی جاسوسی کے بجائے یہ دھیان رکھیں کہ براڈ شیٹ کو اربوں روپے پہنچانے کے لیے کابینہ کے ارکان اتنی جلدی میں کیوں تھے۔

انہوں نے کہا کہ ان جاسوسوں کو چاہیے کہ وہ یہ دھیان رکھیں کہ جہاز کی قسطیں کیوں ادا نہیں کی گئیں اور یہ کہ دہشت گرد کیا کر رہے ہیں۔

ابصار عالم نے ایک اور ٹوئٹ میں کہا کہ برطانوی عدالت کا فیصلہ آنے سے تقریباً 2 ماہ پہلے ای سی سی نے 4 نومبر کو براڈ شیٹ کو دینے کے لیے 433 ملین روپے کی سپلیمنٹری گرانٹ کی منظوری کی سفارشات کابینہ کو بھیجی جو کابینہ نے منظور کر لیں۔

انہوں نے اس کے ثبوت کے طور پر دستاویز بھی شیئر کیں جن سے ثابت ہوتا ہے کہ برطانوی عدالت کی جانب سے جرمانے کی مد میں پاکستانی ہائی کمیشن سے پیسے وصول کرنے کے فیصلے سے قبل ہی پاکستانی حکومت یہ پیسے ادا کرنے کی تیاری میں تھی۔ جس کے لیے ای سی سی نے کابینہ سے منظوری بھی لے رکھی تھی۔

ابصار عالم نے ایک اور ٹوئٹ کیا جس میں انہوں نے اس شخص کے چہرے کو چھپا کر یہ بھی بتایا کہ وہ اس شخص کا چہرہ بھی دیکھ چکے ہیں جس کو موٹرسائیکل کے انجن پر ہاتھ رکھے دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ شخص کچھ کر نہیں رہا بلکہ صرف موٹرسائیکل کی خرابی کا بہانا کر رہا ہے۔ ایک اور تصویر میں موٹرسائیکل کا نمبر بھی موجود ہے جسے انہوں نے خود ہی مٹادیا ہے۔

انہوں نے لکھا کہ یہ تصاویر صرف ریکارڈ کے لیے لگا رہے ہیں۔

  • اس میں اس کالے کنجر کی این جی او کی انڈیا فنڈنگ کا راز کھلنے کی وجہ یہ کالا سور بہت پریشان ہے میراثی مثلی اور کنجر ابصار

  • اس سؤر کی شکل والے ابشار عالم کو نکالا عدلیہ نے ھے لیکن اپنے آقا اور پے ماسٹر کی ھدایت پر زھر عمران خان کے خلاف اگل رھا ھے۔ بجاۓ حقائق تسلیم کرنے کے یہ الزام دوسروں پر لگا رھا ھے

  • اس عقل کے ڈھکن کو کوئی بتائے کہ تیرے باپ نواج شریف نے جو کرپشن کی ھے اس کو پکڑنے کے لئے مشرف نے جو کمپنی ہائر کی تھی اور پھر مشرف نے تیرے کرپٹ روحانی باپ نواج شریف سے این آر او کر دیا اور اس کمپنی براڈ شیث سے یکطرفہ معاہدہ ختم کر دیا یقیناً اس کام میں نیب سمیت بہت سی کالی بھیڑیں ملوث ہیں اور تحقیقات کے بعد ان تمام کالی بھیڑوں کا کردار کو عوام کے سامنے آنا چاہئے ھے اور یہ رقم ان کالی بھیڑوں سے وصول ہونی چاہیے جس کی وجہ سے پاکستان کو جرمانہ ہؤا آور آگر اس جرمانہ کو ٹائم سے ادا نہ کیا جائے تو پھر اس غریب قرضوں میں ڈوبی قوم کو ان حرام خوروں کی لوٹی ہوئی دولت پر مزید جرمانہ دینا ہوگا نیب کا کردار یقیناً آپنے کرپٹ آقاؤں کے عین مطابق رہا ھے گزشتہ 20 سالوں سے نیب میں شاید کوئی تو دیناتدار شخص ہوگا جو عوام کو حقائق سے آگاہ کرے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >