ویڈیو ہے تو سامنے لائیں انتظار نہ کریں، علی زیدی کا پیپلزپارٹی کو جواب

ویڈیو ہے تو سامنے لائیں انتظار نہ کریں، وفاقی وزیر بحری امور علی زیدی

وفاقی وزیر علی زیدی اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے مابین تلخ کلامی کے واقعہ کی مبینہ ویڈیو کا معاملہ اب موضوع بحث بن چکا ہے جس کے متعلق تحریک انصاف کے رہنما علی زیدی نے کہا ہے کہ اگر کوئی ویڈیو ہے تو سامنے لائیں انتظار نہ کریں۔ کل کا انتظار کس لیے؟ ویڈیو ہے تو آج ہی سامنے لاؤ۔

علی زیدی نے یہ بھی کہا کہ ہم وزیر اعلیٰ سندھ سے جواب لے کر رہیں گے۔ پنشن کے پيسوں ميں جوکرپشن ہوئی ہے اس کا جواب لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے بيوروکريٹس جوکرپشن کرتے ہيں اس کا بھی جواب ليں گے۔

یاد رہے کہ اس واقعے کی ویڈیو سے متعلق وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط ڈاکٹر شہباز گل نے بھی کہا تھا کہ پی پی گروپ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی سربراہی میں علی زیدی کو ویڈیوعام کرنےکی دھمکیاں دے رہا ہے۔

وفاقی وزیر اور وزیر اعلیٰ سندھ کے مابین تلخ کلامی اور اس کے بعد ویڈیو سامنے لانے کے علی زیدی کے مطالبے پر صوبائی وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ نے نجی ٹی وی سے گفتگو کے دوران کہا ہے کہ علی زیدی بچگانہ حرکتیں کررہے ہیں۔ اجلاس میں بھی ان کا رویہ درست نہیں تھا۔ مراد علی شاہ نے واضح طور پر کہا تھا کہ میں آپ کو جوابدہ نہیں ہوں۔

سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اسد عمر سمیت پی ٹی آئی کے دیگر لوگ بھی میٹنگ میں موجود تھے لیکن انہوں نے واک آؤٹ نہیں کیا، وزیراعلیٰ نے وزیراعظم کو جو خط لکھا وہ بھی ہم نے پبلک نہیں کیا۔ وزیراعظم کو خط لکھا گیا ہے، فیصلہ اب انہوں نے کرنا ہے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم کو لکھے گئے وزیراعلیٰ سندھ کے خط پر علی زیدی نے بھی جوابی خط لکھ دیا ہے، انہوں نے جوابی خط میں کہا کہ مرادعلی شاہ نےادب و شائستگی کی حدود پھلانگ کرخط بھجوایا، مراد علی شاہ کا خط ان کے دماغ میں سمائے بلا جواز تکبر کا مظہر ہے، انتظامی معاملات چلانا تو پہلے ہی مراد علی شاہ کے بس میں نہ تھا، مگر موصوف گفتگو کےآداب سے بھی مکمل ناواقف اوربے بہرہ ہیں۔

دراصل وزیراعلیٰ سندھ کی سربراہی میں ہونے والے ایک اجلاس کے دوران وفاقی وزیر علی زیدی نے سوال کیا کہ ایس بی سی اے کے بجائےکراچی بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کب بنےگی؟ سندھ سالڈویسٹ مینجمنٹ کی جگہ کراچی سالڈویسٹ مینجمنٹ کب ہوگا؟

وزیراعلیٰ سندھ نے جواب دیا کہ اس معاملے پر کام جاری ہے۔ جس پر وگاقی وزیر نے دوبارہ سوال پوچھا کہ معاملہ کب تک مکمل ہوگا تاریخ بتائیں؟

وزیراعلیٰ نے تلخ لہجے میں جواب دیا کہ میں آپ کو جوابدہ نہیں ہوں۔ وزیراعلیٰ کےجواب پر علی زیدی سیخ پا ہوگئے اور اپنی فائلز اٹھا کر اجلاس سے وک آؤٹ کر گئے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >