پرائیویسی کی خلاف ورزی پر فیس بک کو کتنے ملین ڈالرز جرمانہ ؟

امریکی ریاست الینوائے میں شکاگو کے اٹارنی نے7 سال قبل 2015 میں فیس بک کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا جس میں الزام تھا کہ فیس بک نے پرائیویسی کے نام پر غیر ضروری معلومات اکٹھی کرنا شروع کر دی ہیں جس کے ثابت ہونے پر عدالت نے فیس بک انتظامیہ پر 650 ملین ڈالر کا جرمانہ عائد کردیا۔

عدالت میں دوران سماعت ثابت ہوا کہ فیس بک انتظامیہ نے ریاست الینوائے کے قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پرائیویسی پالیسی کے نام پر چہروں کی شناخت اور بائیو میٹرک ڈیٹا غیر قانونی طور پر جمع کیا ہے۔عدالت نے شکاگو اٹارنی کی درخواست پر فیس بک انتظامیہ پر 650 ملین ڈالر کا جرمانہ عائد کر دیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ابھی فیس بک 2021 کے آخر تک فیشل ریکگنیشن ٹیکنالوجی سے مزین اسمارٹ گلاسز بھی متعارف کرانے کا اعلان کر چکا ہے اور اس مقصد کے لیے عینکیں بنانے والی معروف کمپنی رے بین کے اشتراک سے کام کیا جا رہا ہے۔

فیس بک پر پہلے بھی جرمانہ ہو چکا ہے ،


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>