حامد میر بھی کبھی اوپن بیلٹ کے حق میں ہوا کرتے تھے

بدلتا ہے رنگ آسمان کیسے کیسے۔۔۔ اوپن بیلٹ کو غیرآئینی قرار دینے والے حامد میر بھی کبھی اوپن بیلٹ کے حق میں ہوا کرتے تھے

معروف اینکر پرسن حامد میر جو آج خود کو جمہوری روایات کا علمبردار کہتے ہیں اور سابق حکومتوں اور موجودہ اپوزیشن جماعتوں کا دم بھرتے نظر آتے ہیں انہوں نے موجود حکومت کی مخالفت میں سینیٹ میں اوپن بیلٹ کو غیر آئینی بھی قرار دیا ہے مگر سابق حکومت کے دور میں وہ خود اوپن بیلٹ کے حامی رہ چکے ہیں۔

3 مارچ 2018 کو جب عمران خان نے سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ سے متعلق کہا کہ ہمارے ملک میں ایوان بالا کے لیے منتخب ہونے والے اپنے ووٹ پیسے لے کر بیچتے ہیں اور انہیں شرم نہیں آتی کہ منتخب لیڈرشپ جب کرپشن کرے گی تو ملک کے حالات کیسے بہتر ہو سکتے ہیں۔

عمران خان نے یہ بھی کہا تھا کہ اس سے ظاہر ہے کہ ہم کس قدر سیاسی پستی اور ذہنی لاشعوری کا شکار ہیں کیونکہ مغرب میں کہیں بھی اس طریقے سے سیاست نہیں کی جاتی۔

عمران خان کے اس ٹوئٹ پر حامد میر نے انہیں حکومت وقت (مسلم لیگ ن) سے مل کر اوپن بیلٹ کے لیے قانون سازی کا مشورہ دیا تھا تاکہ اوپن بیلٹ کے ذریعے یہ ہارس ٹریڈنگ کا سلسلہ ختم کر کے کرپشن کی لعنت سے چھٹکارا پایا جائے۔

مگر آج وہی حامد میر کہتے ہیں کہ اوپن بیلٹ کا آئین میں ذکر نہیں تو اس لیے بیلٹ کو اوپن کرنے سے آئین کو خطرہ ہے اور جمہوریت خطرے میں پڑ سکتی ہے۔

  • اس گشتی زاد بد زات نسل فراڈئے اور را کے پالتو کتے زحامد میر جعفر اور پاکستان کی فوج پر بھونکنے والے مودی کے پالتو کو جو ہدایت اور لائن را سے ملے گی یہ حرامُکا نطفہ مودی کا پالتو کتا اسی لائین پر چلے گا
    اب اس میں کیا ؟

  • کیا یہ اتفاق ھے ? یا یہ سب کرپٹ ایک پیج پر ہیں؟
    جب عمران خان نے الیکشن کمیشن سے 2014 میں نواج گدو شریف کی حکومت کے دوران 4 حلقوں میں دھاندلی پر انصاف مانگنے کی کوششیں کیں تو کہیں سے انصاف نہ ملا اور آخر کار عمران خان نے دھرنے کا فیصلہ کیا تو اس وقت بھی تمام حرام خور صحافیوں کا ٹولہ+حرام خور پی ڈی ایم کا ٹولہ+تمام حرام خور وکلاء کا ٹولہ+ الیکشن کمیشن ایک پیج پر تھے آج 7 سالوں بعد بھی جبکہ عمران خان کی حکومت کو آئے ہوئے 3سال ہونے کو ہیں تمام حرام خور صحافیوں کا ٹولہ+پی ڈی ایم کا حرام خور جماعتوں کا ٹولہ+حرام خور وکلاء تنظیموں کا ٹولہ +الیکشن کمیشن کا ٹولہ سب ایک پیج پر عمران خان کی حکومت کے خلاف جمع ہیں اور ان حرام خور مافیاز میں کوئی شرم وحیاء بھی باقی نہیں ھے جبکہ عوام 2011 سے آج تک عمران خان کے ساتھ کھڑی ھے اور ان حرام خور مافیاز کے خاتمے تک عمران خان کی جہدوجہد میں شامل رھے گی۔ انشاءاللہ


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >