بابر اعظم کے نمبر 1 بلے باز بننے پر بھارتیوں کو آگ لگ گئی،ٹویٹر پر محاز کھول لیا

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی جانب سے بھارتی بیٹسمین ویرات کوہلی کی جگہ پاکستانی کپتان بابراعظم کو دنیا کا بہترین بلے باز قرار دیا گیا ہے، مگر بھارتیوں کو یہ خبر ہضم نہیں ہورہی ہے۔

بابراعظم کو بہترین بلے باز قرار دیئے جانے پر بھارتی ٹویٹر صارفین اپنی خفت چھپانے اور غصے کا اظہار کرنے کیلئےآئی سی سی رینکنگ میں کیڑے نکالنے، ویرات کوہلی کو بہترین قرار دینے کے جواز ڈھونڈنے میں مصروف نظر آرہے ہیں۔

بھارتی صارف ڈکشیا گیاوالی نے طنزیہ انداز میں بابراعظم کو مبارکبا د پیش کرتے ہوئے لکھا "سلو کلیپ”

بھارت کے ایک انجینئر ابھیشیک وشال نے آئی سی سی رینکنگ کے جواب میں اپنے دل کے پھپھولے پھوڑتے ہوئے لکھا کہ”بابراعظم سری لنکا اور زمبابوے کی ٹیموں کے خلاف اچھا کھیلتے ہیں، جبکہ دیگر ٹیموں کے خلاف ناکام ہیں”۔

انہوں نے مزید لکھا کہ” میں امید کرتا ہوں وہ سمجھیں گے کہ جنوبی افریقہ کے بیشتر کھلاڑی آئی پی ایل کی وجہ سے اس سیریز کا حصہ نہیں ہیں، اور اہم کھلاڑیوں کی غیر موجودگی میں بابراعظم اچھی اننگز کھیل گئے”۔

ایک صارف نے آئی سی سی کی جانب سے بابراعظم کو پہلی پوزیشن دینے کے طریقے پر سوال اٹھادیا اور پوائنٹس میں الجھاکر خود کو تسلی دینے کی کوشش کی کہ بابراعظم پہلی پوزیشن پر نہیں آسکتے۔


دیو دھاریا کا کہنا تھا کہ اس پوزیشن پر آنے کے بعد آپ کو زمباوے کینیا، نیپال، بنگلہ دیش جیسے ملکوں کا شکریہ ادا کرنا چاہیے۔


ایک صاحب بابر اعظم کو "کنگ” کہنے کے خلاف توجیح لے آئے اور فرمانے لگے کہ بابرکو کنگ کہنا ویرات کوہلی کی بے عزتی ہے ایک کھلاڑی صرف رنز بناکر کنگ نہیں بن سکتا، آپ بابر کو کوئی اور اچھا ٹائٹل دے دیں۔


کرشنا ٹھاکر اخلاقی مقام پر فائز ہوتے ہوئے اپنے بھارتی صارفین کو فرماتے ہیں کہ بابراعظم کوٹرول کرنے کی ضرورت نہیں ہے ہمیں پتا ہے دنیا کا بہترین کھلاڑی کون ہے، رینکنگ تو ہر ہفتے بدل جاتی ہے، کوہلی تو ہمیشہ کیلئے لیجنڈ بن گیا ہے۔


ایک اور بھارتی صارف نے کہا کہ پاکستانیوں کو اس بات پر اتنا جذباتی ہونے کی ضرورت نہیں ہے، بابراعظم ابھی ویرات کوہلی کی طرح میچ ونر نہیں بنا ہے، تو پرسکون رہیں کیونکہ ابھی بابر کو بہت طویل سفر طے کرنا ہے، اسے ابھی سے کنگ کہہ کر اس پر اتنا دباؤ نہ ڈالیں ورنہ وہ 50 گیندوں پر 50 رنز والا کھلاڑی بن جائے گا۔


ایک صاحب الگ ہی دلیل لے آئے اور کہنے لگے کہ پہلی پوزیشن پر آنا بڑی بات نہیں ہے اس پر برقرار رہنا بڑی بات ہے، ویرات کوہلی نے اے بی ڈی ولیئرز سے جب پہلی پوزیشن چھینی تو انہیں اس پوزیشن پر 1480 دن ہوگئے تھے، ویرات اس پوزیشن پر 1493 دن تک براجمان رہے، یہ کوئی مذاق نہیں ہے۔


مون سون نے کہا کہ بابرایک اچھا کھلاڑی ہے اور وہ دنیا کے ٹاپ 5 کھلاڑیوں میں رہنے کے قابل ہے مگر فٹنس، بیٹنگ سکلز، باڈی لینگوئج، اگریشن، ایٹیڈیوڈ میں اس کا موازنہ ویرات کوہلی سے نہیں ہوسکتا۔


کرکٹ سے متعلق بھارتی موبائل ایپلیکیشن کرک وک نے اپنی ٹویٹ میں بابراعظم اور ویرات کوہلی کی پرفارمنس کا موازنہ پیش کرنے کی کوشش کی کہ جتنے میچز کے بعد بابر نے آئی سی سی کی رینکنگ میں پہلی پوزیشن حاصل کی اس موقع پر کوہلی تین بار آئی سی سی رینکنگ میں آچکے تھے۔

تاہم کرک وک کے موازنے کے دیگر اعدادوشمار کافی دلچسپ ہیں، 78 میچز کھیلنے کے بعد بابراعظم ایک بار جبکہ کوہلی تین بار رینکنگ میں آئے، مگر انہوں نے 78 میچوں میں 45اعشاریہ58 کی ایوریج سے 3100 رنز بنائے اور ان کا سٹرائیک ریٹ83اعشاریہ26 رہا۔

دوسری جانب بابراعظم نے 78 میچوں میں 56اعشاریہ83 کی ایوریج سے3808 رنز بنائے اور ان کا سٹرائیک ریٹ88اعشاریہ70 رہا۔

ویرات نے اس عرصے میں 8 سنچریاں اور 20 ففٹز سکور کیں، بابراعظم نے13 سنچریاں اور 17 ففٹیز سکور کیں، ویرات کا سب سے زیادہ سکور118 رہا جبکہ بابراعظم نے 125 رنز ناٹ آؤٹ سکور بنایا۔

یہ اعدادوشمار خود ہی ان تمام دلیلوں اور تاویلوں کے جواب ہیں کہ وہ بیٹسمین جس نے ہر معاملے میں ویرات کو پیچھے چھوڑ دیا اسے اگر آئی سی سی رینکنگ میں ایک بار شامل کیا گیا تو اس کا مطلب معاملہ رینکنگ کا نہیں بلکہ بھارتی بابرکے خلاف ہیں اور بابر نے دنیائے کرکٹ کی ہر اچھی ٹیم کے خلاف بہترین رنز بنا رکھے ہیں۔

بابر اعظم کے نمبر 1 بلے باز بننے پر بھارتیوں کو آگ لگ گئی،ٹویٹر پر محاز کھول لیا

  • It should be celebrated but consistency is the key. Babar still has to prove a lot to be in the elite club of great batsmen. Virat without any doubt is one of the greatest batsmen in recent/modern cricket.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >