جھوٹی خبر پر علی محمد خان کا نجی ٹی وی چینل سے معافی کا مطالبہ

تحریک انصاف کے وفاقی وزیر علی محمد خان نے اپنے متعلق بول نیوز کی خبر کو من گھڑت اور بے بنیاد قرار دیدیا اور معافی کا مطالبہ کردیا

آج ایک ٹی وی چینل بول نے خبر دی کہ متعدد وفاقی وزرا نے کالعدم ٹی ایل پی پر پابندی کی مخالفت کردی ۔

بول نیوز نے تحریک انصاف کے ایم این اے علی محمد خان سے متعلق دعویٰ بھی کیا کہ پابندی نہ ہٹائی گئی تو پی ٹی آئی چھوڑ بھی سکتے ہیں

اس پر علی محمد خان کی طرف سے سخت ردعمل دیکھنے کو ملا۔ علی محمد خان نے بول ٹی وی کی خبر کو من گھڑت اور بے بنیاد قرار دیتے ہوئے بول ٹی وی سے معافی کا مطالبہ کیا۔

علی محمد خان نے کہا کہ یہ ایک جھوٹی خبر ہے۔۔ انتہائی حساس معاملے پر انتہائی غیرذمہ دارانہ صحافت ہے، اس جھوٹی خبر پر بول ٹی وی کو معافی مانگنی چاہئے ورنہ میں قانونی ایکشن لینے کا حق محفوظ رکھتا ہوں۔

  • اس میڈیا چینلز کا لائسنس کینسل کیا جائے جو غلط خبریں نشر کرتا ھے فتنہ پیھلانا قتل سے بھی بڑا جرم ھے جو بھی صحافی یا میڈیا چینلز جھوٹی خبریں نشر کریں ان چینلز کے لائیسنس کینسل کئے جائیں اور جھوٹی خبریں پیھلانے والے صحافیوں پر ٹی وی چینل پر آنے پر مکمل پابندی عائد کی

      • پھر چند لوگ کہتے ہیں عدالتوں کا کیا قصور ھے عدالتوں کا یہ قصور ھے کہ میڈیا طاقتوروں کو فوراً انصاف مل جاتا ھے اور غریب عوام سالوں عدالتوں اور وکیلوں کے چکروں میں اس دنیا سے ہی رخصت ہو جاتے ہیں اور ساتھ ساتھ لاکھوں غریب لوگ ذہنی توازن کھو دیتے ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >