اسسٹنٹ کمشنر سیالکوٹ کی تعریف، عثمان ڈار نے تنقید کا رخ اپنی طرف موڑلیا

اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف کی حمایت می ٹویٹ کرنے پر سوشل میڈیا صارفین نے عثمان ڈار کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

سیالکوٹ میں سستے رمضان بازاروں میں ناقص اشیا کی فروخت پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان اے سی سیالکوٹ سونیا صدف پر برس پڑیں، انہوں نے سونیا صدف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تمہیں کس بے غیرت نے اسسٹنٹ کمشنر لگا دیا، افسر شاہی کی کارستانیاں حکومت بھگت رہی ہے۔

انہوں نےمزید کہا کہ آپ کی حرکتیں اسٹنٹ کمشنروالی نہیں ہیں ، آگر آپ اسسٹنٹ کمشنر ہیں تو عوام کا سامنا کریں، ان سے چھپ کیوں رہی ہیں۔ ہر جگہ بہترین کام ہورہا ہے مگر سب سے بُرا حال سیالکوٹ کا ہے۔

فردوس عاشق اعوان کے اس برتاؤ پر تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار بھی خاموش نہ رہ پائے اور کہا کہ سیالکوٹ کے رمضان بازار میں اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف کے ساتھ پیش آئے ناخوشگوار واقعے پر افسوس ہوا!

عثمان ڈار نے سونیا صدف کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ میں ذاتی طورپر اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف کو جانتا ہوں وہ ذمہ دار اور قابل آفیسر ہیں۔

عثمان ڈار نے مزید کہا کہ خواتین کا ہمارے معاشرے کے گورننس سسٹم میں کردار انتہائی خوش آئیند ہے جسے سراہا جانا چاہیئے!

عثمان ڈار نے اسسٹنٹ کمشنر سیالکوٹ سونیا صدف کی حمایت کرکے تنقید کا رخ اپنی طرف موڑ لیا۔ عثمان ڈار کے اس ٹویٹ پر تحریک انصاف کے حامی سوشل میڈیا صارفین نے عثمان ڈار کو آڑے ہاتھوں لے لیا اور کہا کہ کیا آپ ہی نے سونیا صدف کو سیالکوٹ کا اسسٹنٹ کمشنر لگوایا تھا؟ سوشل میڈیا صارفین نے یہ بھی کہا کہ عمران خان کو دشمنوں کی ضرورت نہیں، آپ جیسے لوگ ہی کافی ہیں۔

سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ عثمان ڈار نے ہی سونیا صدف کو اس عہدے پر لگوایا تھا اور عثمان ڈار تنقید سونیا صدف کی حمایت میں نہیں بلکہ ذاتی وجوہات کی بنیاد پر کررہے ہیں۔
محمد آصف نے لکھا کہ سب اے سی صاحبہ پہ تنقید کر رہے تھے پھر توپوں کا رخ اسکی طرف ہو گیا جس نے سونیا صدف کو لگوایا تھا ۔

عزیزالرحمان نے عثمان ڈار کو بے شرم قرار دیتے ہوئے لکھا کہ تم جیسے بے شرم خان کے لیے مشکل پیدا کر رہے ہو۔

عبداللہ نے کہا کہ تم اپنا حسد نکال لو اپا پر اس اے سی کی کارکردگی کو کون نہیں جانتا غریبوں پر قہر امیروں پر کرم ویسے پی ٹی آئی کے زمہ دار بندے کو اس کی صفائی کیوں دینا پڑی

نوید نے لکھا کہ یہی وجہ ہے کہ اس چوّل انسان کو کوئی زیادہ سیرئیس نہں لیتا سیالکوٹ میں۔ ان کو خبر ہی نہں کہ مافیا سے کیسے لڑنا ممی ڈیڈی اسٹائل میں سیاست کرتے ۔

ایک سوشل میڈیا صارف نے لکھا کہ یہ ہے پارٹی ڈسپلن ایک بیوروکریٹ آپ کے نظریے کی ماں بہن ایک کر رہا ہے اور آپ اس کے حق میں کھڑے ہو گے واہ

لالیکا نے لکھا کہ مؤرخ لکھے گا کہ پاکستان تحریک انصاف کی بربادی میں اسکے سو کالڈ لیڈران کا ہاتھ تھا۔

ایک اور سوشل میڈیا صارف نے لکھا کہ AC ایک وزیر کو گھاس نہیں ڈال رہی اور اکڑ کر چلی گئی اس کا عام عوام کےساتھ کیسا برتاؤ ہوگا؟ عثمان ڈار کی اسکی حمایت کرنےکی کوئی ذاتی وجوہات ہیں، یہ ملک و قوم کے وسیع تر مفاد میں بلکل نہیں ہورہا!

عمران بٹ نے لکھا کہ جناب وزیر اعظم جب تک ایسے لوگ آپ کے ساتھ ہیں یقین کریں عوام آپ سے دور ہوتی جائے گی یہ لوگ عوام کی خدمت کم اور آپنی زیادہ کرواتے ہیں بیوروکریسی سے اس لئے عوام کو بھول کر بیوروکریسی کے تلوے چٹتے ہیں ایسے لوگ

  • مجھے آج تک یہ سمجھ نہیں آتی کہ عمران نے اس جعلی ڈگری والے کھسرے کو کیوں رکھا ہے۔۔اور اسکی پارٹی کے لیے کیا خدمات ہیں؟.ایک سیٹ تو جیت نہیں سکتا باقی کیا کریگا؟

  • By the way, who is Firdous Ashiq Awan? She is neither a minister nor an elected person. With what authority is she scolding a Gazetted Class-I officer? She has to know her limits. Her only job is as an aide to Usman Buzdar, so she should’ve complained to him, rather than bullying an officer.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >