بیٹے کی تعلیمی قابلیت کا بیان لیاقت بلوچ کو مہنگا پڑ گیا،سوشل میڈیا صارفین ناراض

بیٹے کی تعلیمی قابلیت کا بیان لیاقت بلوچ کو مہنگا پڑ گیا،سوشل میڈیا صارفین ناراض

جماعت اسلامی کے نائب امیر لیاقت بلوچ نے اپنے بیٹے کی تعلیمی کارکردگی سے متعلق ٹویٹر پر ایک بیان جاری کیا جس پر ٹویٹر صارفین ناراض ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لیاقت بلوچ کا اپنی ٹویٹ میں کہنا تھا کہ الحمد اللہ میرے بیٹے احمد جبران بلوچ نے یونیورسٹی آف ٹورنٹو سے پی ایچ ڈی کا تھیسز مکمل کرلیا ہے،امتحان میں ان کی کارکردگی کو بہترین قرار دیا گیا ہے۔

انہوں نے میٹرک سے پی ایچ ڈی تک جن اداروں میں احمد جبران نے تعلیم حاصل کی ان کا ذکر کرتے ہوئے مزید کہا کہ یہ میرے بیٹے کی مسلسل محنت کا نتیجہ ہے، یہ اس کے والدین، دوستوں خصوصاً پنجاب اسکول کیلئے خوشی کا مقام ہے۔

ٹویٹر پر ان کے اس بیان پر ملا جلا ردعمل دیکھنے میں آیا کچھ نے انہیں مبارکباد پیش کی تو بہت سے ٹویٹر صارفین نے سوال اٹھایا کہ اپنے بیٹے کو جہاد کیلئے کشمیر کیوں نہیں بھیجا؟

جیلانی ترین نامی ایک صارف نے لکھا کہ لیاقت بلوچ صاحب کو مبارک ہو کہ ملک کی سادہ لوح عوام کو مسلمانوں کے خلاف جہاد کیلئے افغانستان بھیجو اور اپنے بچوں کو تعلیم حاصل کرنے کیلئے بیرون ملک بھیج دو۔


نبیلہ فیروز بھٹی نامی ایک صارف نے بھی طنزیہ انداز میں لیاقت بلوچ کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ مجھے ان والدین کیلئے افسوس ہے جن کے بچے بیرون ملک سے تعلیم حاصل نہیں کرسکے کیونکہ انہوں نے جماعت اسلامی میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔

احمد خان نامی ایک صارف نے کہا کہ حضور والا! بیٹے کی کامیابی بہت مبارک ہو۔ مگر سوچیے کہ غریبوں کے بچے مدرسے میں پڑھائے۔ بڑے ہوکر انکی داڑھیاں رکھوائیں، پھر انہیں جہاد کے نام پر دہشتگرد بنایا۔ مگر اپنے بیٹے کو اچھے سکولوں میں دنیاوی تعلیم دلوائی، پی ایچ ڈی کروائی مگر داڑھی نہ رکھوائی۔

ٹویٹر صارفین نے لیاقت بلوچ کے سیاسی کردار اور ذاتی زندگی کے دہرے معیار پر سوال اٹھائے اور شدید غم و غصے کا اظہار کیا، سوشل میڈیا صارفین کو کہنا تھا کہ جو زندگی لیاقت بلوچ نے اپنے بیٹے کیلئے چنی وہ اپنی جماعت کے ووٹر اور سپورٹرز کیلئے کیوں نہیں چنتے؟ انہیں کیوں جہاد اور مدارس میں تعلیم حاصل کرنے پر مجبور کرتے ہیں۔

  • لیاقت بلوچ کس بے شرمی اور ڈھٹای سے اپنے بیٹے کا ذکر کررہا ہے ایک یہی نہیں قاضی حسین احمد، منور حسن، حتی کہ ان کا منافق بانی لیڈر مودودی تک اپنے بچوں کو امریکہ اور دوسروں کو جہاد پر جانے کی ترغیب دیتا رہا مودودی تو مرا بھی امریکہ میں تھا جماعت پر لعنت ڈال کر امریکہ چلا گیا تھا اپنے دونوں بیٹوں کے پاس

  • افسوس اس کے ہاتھ میں ڈنڈا دے کر جماعت کے دھرنوں میں کیوں نہیں بھیجا اور مدرسوں میں تعلیم کیوں نہیں دلوائ۔۔۔۔۔ واہ رے منافقت تیرا ہی آسرا

  • Liaquat Baloch Sb,

    Mubarak HO. But the Post is un called for. The religious-politico leaders have failed miserably to know how “ Awam” judge them and critically. The reason they have failed.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >