اسرائیل کا نام لے کر مذمت نہ کرنے پر ملالہ تنقید کی زد میں

مذمتی بیان میں اسرائیل کا زکر نہ کرنے پر ملالہ تنقید کی زد میں

امن کا نوبل انعام پانے والی ملالہ یوسف زئی کو  مسجد الاقصیٰ پر اسرائیلی فورسز کے حملے کے مذمتی بیان میں اسرائیل کا ذکر نا کرنا مہنگا پڑگیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں مسلمانوں کے قبلہ اول مسجد الاقصیٰ میں عشاء کے نماز کے دوران اسرائیلی افواج نے نمازیوں پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں متعدد فلسطینی شہید اور درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔

اس واقعے پر سیاسی و سماجی رہنماؤں کی جانب سے مذمتی بیانات کا سلسلہ جاری ہے ، ایسے میں ایک مذمتی بیان ملالہ یوسف زئی کی جانب سے بھی آیا مگر انہیں اس بیان کے بدلے میں سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑررہا ہے۔

ملالہ یوسف زئی نے اپنے بیان میں کہا کہ "یروشلم میں جو تشدد ہوا خصوصاً بچوں پر وہ ناقابل برداشت ہے، اس طویل عرصے کے تنازعے نے بہت سے بچوں سے ان کی زندگیاں اور ان کے مستقبل چھین لیے ہیں، قائدین کو اس معاملے پر جلد ایکشن لینا ہوگا، کیونکہ جہاں بچے اور عام لوگ محفوظ نہ ہوں وہاں امن ممکن نہیں ہوسکتا”۔

سوشل میڈیا صارفین نے ان کے بیان میں واقعے کے براہ راست ذمہ دار اسرائیل کا ذکر نہ ہونے پر انہیں آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ ملالہ نے جان بوجھ کر اسرائیل کو اپنے بیان میں شامل نہیں کیا۔

جاوید حسن نامی ایک صارف نے ملالہ کی ٹویٹ سے اقتباسات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ” پوری کوشش کی گئی کہ بیان میں غیر جانبداری دکھائی جائے، آپ سوچیں کہ اگر طالبان یا شدت پسند مسلمانوں کی جانب سے ایسا کوئی واقعہ ہوتا تو کیا ایسے الفاظ استعمال ہوتے؟ مگر آکسفورڈ کے پڑھے لکھے لوگ اسرائیل کا نام نہیں لے سکتے”۔

اسامہ نے ملالہ کی ٹویٹ پر جگہ جگہ لال رنگ سے تصحیح کرتے ہوئے اس بیان کو کچھ اس رنگ میں ڈھالا کہ” یروشلم میں مسلمانوں کے خلاف ہونے والی دہشت گردی ناقابل برداشت ہے، فلسطین پر اس طویل قبضہ نے مسلمانوں کی زندگیوں اور مستقبل کو برباد کردیا ہے، جب تک معصوم لوگ محفوظ نہیں رہیں گے امن ناممکن ہے”۔

ورک شاہزیب نے کہا کہ ” جب ٹی ٹی پی کے ایک فیک اکاؤنٹ سے لوگوں کو ہراساں کیا جارہا تھا تو ملالہ نے پاکستان کا نام لینے میں ایک لمحہ بھی نہیں لگایا اور انہوں نے اپنے اس پیغام میں وزیراعظم عمران خان کو ٹیگ بھی کیا، آج انہوں نے اپنے بیان میں اسرائیل کا ذکر تک نہیں کیا، ان کی اس حرکت سے مجھے بالکل حیرت نہیں ہوئی ہے”۔

سوشل میڈیا صارفین کے اس ردعمل کے حوالے سے ملالہ یوسف زئی نے تاحال کوئی جواب نہیں دیا ہے۔

  • She is a TOOL of western powers. TOTALLY MANUFACTURED & FIRED as needed on occasions like these. Who is she kidding only herself. Worst part she ain’t that smart either. Whatever they write for her she posts as is.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >