حبیب جالب کی بیٹی کو والد کی کتاب چھپ جانے کے بعد بھی پبلشر نے پیسے نہ دیے

حبیب جالب کی بیٹی کو والد کی کتاب چھپ جانے کے بعد بھی بپلشر نے پیسے نہ دیے

مشہور شاعر حبیب جالب کی بیٹی طاہرہ حبیب جالب نے والد کی کتاب لاہور کے ایک پبلشر سے چھپوائی تو پبلشر نے رقم ادا نہ کی۔ انہوں نے جب جمہوری پبلیکیشنر کے مالک فرخ سہیل گوئندی سے فون پر رقم کا تقاضا کیا تو وہ بدزبانی پر اتر آئے۔

طاہرہ حبیب جالب نے فرخ سہیل گوئندی جو کہ جمہوری پبلیکیشنر کے مالک ہیں انہیں فون کیا اور کہا کہ وہ انہیں کتاب کے پیسے کیوں نہیں دے رہے جس پر فرخ سہیل نے کہا کہ مصباح ہر چیز کا حساب رکھتی ہے اس لیے وہ انہیں پیسے نہیں دے سکتے۔

جواب میں طاہرہ حبیب جالب بتاتی ہیں کہ انہیں آج تک کسی بھی پبلشر نے حبیب جالب کی کتابوں کا کوئی بھی پیسہ نہیں دیا۔ فرخ سہیل بتاتے ہیں کہ حبیب جالب فنڈز میں سے ان کو ایک بار پیسے دیئے تھے جس پر طاہرہ کہتی ہیں کہ انہوں نے کتابوں کا کوئی پیسہ نہیں دیا البتہ جو پیسے دیئے وہ حبیب جالب ہی کے فنڈز تھے جن میں سے انہیں رقم دی گئی۔

حبیب جالب کی صاحبزادی نے جب فرخ سہیل گوئندی سے دوٹوک الفاظ میں پیسوں کا تقاضا کیا تو انہوں نے کہا کہ وہ تصادم چاہتی ہیں۔ جس پر طاہرہ نے کہا کہ وہ تو صرف اپنا حق مانگ رہی ہیں۔ جواب میں پبلشر نے کہا کہ وہ ان کے دفتر آ کر حساب کریں اور ساتھ ہی انہیں اس طرح کی بات کرنے سے بھی منع کر دیا۔

گفتگو کے دوران طاہرہ حبیب نے ان سے کہا کہ وہ خدا کا خوف کریں اور ان کے پیسے انہیں دیں جس کی وہ حقدار ہیں جس پر فرخ سہیل گوئندی نے کہا کہ وہ نہیں کرتے خدا کا خوف وہ اپنا خدا اپنے پاس رکھیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >