اسرائیل کے فلسطین پر جاری مظالم پر انصار عباسی نے فلمی سین کی تصویر شیئر کر دی

نامور انگریزی روزنامے سے منسلک سینئر صحافی انصار عباسی نے اسرائیل کے فلسطین پر جاری مظالم کے حوالے سے ایک ٹوئٹ شیئر کی جس میں انہوں نے حقیقی برپا ہونے والے مظالم کی بجائے ایک فلمی سین کی تصویر شیئر کر دی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر انصار عباسی کی جانب سے شیئر کیے گئے پیغام میں سینئر صحافی نے ایک تصویر شیئر کی اور اس کے کیپشن میں ایک شعر لکھا

بیچ کر تلواریں مصلے خرید لیے تم نے

بیٹیاں لٹتی رہیں اور تم دعائیں کرتے رہے۔

اس ٹوئٹ میں انصار عباسی کی جانب سے شیئر کی گئی تصویر دراصل فلسطینیوں پر ہونے والے حقیقی مظالم کی نہیں بلکہ یہ "لبنان” نامی فلم کا ایک سین ہے جو کہ 2009 میں بنائی گئی تھی۔ اس فلم کے ڈائریکٹر سیموئل ماؤز اور پروڈیوسر عوری سباگ اور آئینت بیکل ہیں۔

انصار عباسی کی جانب سے اتنے اہم مسئلے پر شیئر کی گئی تصویر جھوٹی ہے جس پر جھوٹی خبروں کی نشاندہی کرنے والے ایک پلیٹ فام نے بھی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ایک فلم کے سین کی تصویر ہے فلسطین کو سپورٹ کرنے کیلیے سینئر تحقیقاتی صحافی انصار عباسی کو معلومات شیئر کرتے وقت زیادہ احتیاط برتنی چاہیے۔

انصار عباسی کی ٹویٹ پر سوشل میڈیا پر لوگوں نے اپنے اپنے انداز میں تبصرے اور تنقید بھی کی


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >