اسرائیل کی حمایت پر بھارت کو سبکی ، اسرائیل نے بھارت کو شرمندہ کر دیا ؟

بھارت ہمیشہ کی طرح دوسرے خطوں کے مسائل میں اپنی ٹانگ اٹکانے کی کوشش کر رہا ہے اور یہاں کی حکمران جماعت بی جے پی کے کئی رہنما #IStandWithIsrael کے ہیش ٹیگ کے ساتھ ٹوئٹس کرتے نظر آ رہے ہیں۔

دوسری جانب بھارت ہی میں کئی لوگ بھارت کے اس رویے کو شرمناک قرار دیتے ہوئے مظلوم فلسطینیوں کے حق کیلئے آواز بلند کر رہے ہیں۔ بی جے پی بہار کے صدر ڈاکٹر سنجے جسوال نے بھی کہا کہ ہر ملک کو اپنا دفاع کرنے کا حق حاصل ہے انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ اس عمل میں اسرائیل کے ساتھ ہیں۔

دوسری جانب اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے اتوار کو ایک ٹویٹ میں اسرائیل کی حمایت کرنے والے 25 ممالک کا شکریہ ادا کیا مگر اس میں بھارت کا نام شامل نہیں تھا۔

نیتن یاہو نے اپنی ٹویٹ میں 25 ممالک کے پرچم لگائے جس میں امریکہ، البانیہ، آسٹریلیا، آسٹریا، برازیل، کینیڈا، کولمبیا، قبرص، جارجیا، جرمنی، ہنگری، اٹلی، سلووینیا، یوکرین و دیگر شامل ہیں۔

جبکہ بھارتی سوشل میڈیا صارفین کو اسرائیل کی حمایت کرنا مہنگا پڑ رہا ہے اور اس پر خود اسرائیلی سوشل میڈیا صارف میدان میں آ گئے ہیں اور جواب میں کہا ہے کہ اسرائیل کو گائے کا پیشاب پینے اور گوبر کھانے والوں کی حمایت کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔

اسرائیلی صارفین کی جانب سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ بھارتی لوگ اپنی گائے کی پوجا کریں اور ان کی خصیہ برداری نہ کریں۔ اسرائیل کے لوگوں نے بھارتیوں کو ان کی اوقات یاد دلاتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ان کے جھنڈے کو بھارت کے جھنڈے کے ساتھ ملا کر ان کی توہین نہ کی جائے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >