بھارت میں صحافی سوشل میڈیا پوسٹ لگانے پر گرفتار،صحافی نے ایسا کیا کہا تھا؟

بھارت میں صحافی کو سوشل میڈیا پوسٹ لگانے پر گرفتار کر لیا گیا،اس نے کیا کہا تھا؟

بھارتی ریاست منی پور میں کشور چندر ونیکگم نامی صحافی کو سوشل میڈیا پر محض ایک پوسٹ لگانے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق صحافی کشور چندر نے اپنی پوسٹ میں لکھا تھا کہ گائے کے پیشاب اور گوبر کو کورونا وائرس کا علاج قرار دیئے جانے کے دعوؤں کو جھوٹ قرار دیا جانا چاہیے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق حکمران جماعت بی جے پی کے منی پور ریاست کے صدر کی کورونا وائرس سے ہلاکت کے بعد کشور چندر نے سوشل میڈیا پر تعزیتی پوسٹ کی جس میں لکھا کہ اگر گائے کے پیشاب یا گوبر سے کورونا کا علاج ممکن ہوتا تو ریاست میں موجود بی جے پی کے صدر تیکندرا ہلاک نہ ہوتے۔

اس پوسٹ کے بعد صحافی کو گرفتار کیا گیا تو اس پر ممبئی پریس کلب نے مذمت کی اور صحافی کی فوری رہائی کا مطالبہ بھی کر دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق صحافی کی اس پوسٹ کے بعد اس کے خلاف مختلف گروہوں کے مابین نفرت انگیزی کو بڑھاوا دینے کے الزام میں بھارتی پینل کوڈ کی دفعہ 153Aاور (2) 505b کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>