وزیرتعلیم شفقت محمود کورونا کو شکست دینے میں کامیاب،طلبا کا خوشی میں مطالبہ

 

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے بعد مکمل طور پر صحتیاب ہوگئے، ان کا کورونا ٹیسٹ منفی آگیا۔ انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ کورونا وائرس سے مکمل صحتیاب ہوگیا ہوں اور میرے گزشتہ دونوں کورونا ٹیسٹ منفی آئے ہیں۔

وفاقی وزیر شفقت محمود نے مزید کہا کہ پوری طرح سے صحتیاب ہوگیا ہوں، آج کام پر واپس جا رہا ہوں، جلد صحتیابی بلاشبہ ویکسین کے باعث ہوئی، ویکسین واضح طور پر کام کرتی ہے اور بیماری کے خلاف بہترین دفاع ہے۔

ان کے اس ٹوئٹ پر طلبا نے ردعمل دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ وزیر تعلیم اپنی صحتیابی کی خوشی میں امتحانات کو ملتوی کر دیں۔ مسٹرجے نامی صارف نے کہا کہ اب اسی خوشی میں امتحانات منسوخ کر دیں۔ بھارت میں بھی ہو گئے ہیں۔

سیرت نے کہا کہ شفقت انکل پلیز امتحانات مت لیں مجھے کچھ نہیں آتا مگر نمبر اچھے نہ آئے تو آگے یونیورسٹی میں داخلہ نہیں ملے گا ابھی امتحانات کو ملتوی کر دیں۔

رؤف نے کہا کہ بالکل درست مطالبہ ہے کیونکہ اگر لڑکیاں فیل ہو گئیں تو ان کی شادی کر دی جائے گی اور اگر لڑکے فیل ہو گئے تو گھر والے رکشہ لے دیں گے۔

ایک طالبہ نے کہا کہ آپ کو صحتیابی کی مبارک ہو مگر ہمارے بارے میں بھی سوچیں کیونکہ نہ تو دن میں سکون ہے اور نہ ہی اس پریشانی سے رات کو نیند آتی ہے۔ ہم کورونا سے مریں یا نہ مریں اس پریشانی سے ضرور مر جائیں گے۔

ایک طالبہ نے کہا نے کہ وہ بطور پاکستانی بھارت کو پسند نہیں کرتی مگر بھارت کا امتحانات کینسل کرنے کا فیصلہ ایسا ہے کہ اس سے اپنے وزرا کے مقابلے مودی کی عزت اس کی نظر میں بڑھ گئی ہے۔

زنیرہ نے کہا کہ شفقت انکل اپنی صحت کا خیال رکھیں ساتھ ہی ساتھ ہمیں بھی ریسٹ کا موقع دیں۔

حمزہ نامی صارف نے تو حد ہی کر دی۔ اس نے کہا کہ اگر ہمارے امتحانات آن لائن نہ ہوئے تو دوبارہ کورونا ہو سکتا ہے۔

اریبہ نے کہا کہ آپ بڑے لوگ ہیں اچھے علاج سے صحتیاب ہو گئے ہیں اگر ہمیں کورونا ہو گیا تو ہمارا مقدر پھر موت ہی ہو گا۔

ایک صارف نے کہا کہ وہ سال میں صرف 40 دن کالج گئے ہیں نہ تو سلیبس پورا ہوا نہ ہی کچھ آتا جاتا ہے۔ ہم کس طرح امتحان دے سکتے ہیں۔ یا تو انہیں ملتوی کریں یا منسوخ کر دیں۔

عائلہ نے کہا کہ آپ کو خدا کا شکر ادا کرنا چاہیے کہ آپ کو ویکسین لگ گئی تھی مگر ان 40 لاکھ طلبا کا بھی سوچیں جو امتحانات تو دیں گے مگر ان کو ویکسین نہیں لگی۔ یہ تو ان کی جانوں کو خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >