ملالہ کے نکاح کے متعلق بیان پر سوشل میڈیا صارفین پھٹ پڑے : نکاح کرنا سنت ہے : متھیرا

لڑکیوں کی تعلیم کیلئے آواز بلند کرنے والی سوات کی گل مکئی ملالہ یوسفزئی کا شادی اور محبت کے حوالے سے کیا خیال ہے، انہوں نے برطانوی فیشن میگزین ووگ کو انٹرویو میں دل کی بات بتادی، انٹرویو میں جب تئیس سالہ پاکستانی کم عمر ترین نوبل انعام یافتہ ملالہ سے شادی اور محبت کے حوالے سے پوچھا گیا تو پہلے انہوں نے کوئی واضح جواب نہیں دیا۔

دوسری بار شادی اور محبت کے حوالے سے سوال پوچھے جانے پر ملالہ یوسفزئی نے اپنی سوچ اور دل کی بات عیاں کردی، ملالہ نے کہا کہ مجھے ابھی تک سمجھ نہیں آتا کہ لوگوں کو شادی کیوں کرنا ہے؟ اگر آپ اپنی زندگی میں کسی کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں تو نکاح نامے پر دستخط کرنے کی کیا ضرورت ہے؟ صرف پارٹنر بن کر کیوں نہیں رہ سکتے؟

ملالہ نے بتایا کہ ان کی والدہ ہمیشہ انہیں شادی کے خوبصورت رشتے کے حوالے سے بتاتی رہتی ہیں، اور ان کے والد کے پاس ایسے لوگوں کی ای میلز آتی ہیں جو انہیں اپنی جائیداد اور پیسوں کے بارے میں بتاکر مجھ سے شادی کرنے کی خواہش کا اظہار کرتے ہیں۔

ان کے اس بیان کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کئی صارفین نے یہاں تک کہہ ڈالا کہ وہ خوش ہیں کہ انہوں نے کبھی بھی ملالہ کو پسند نہیں کیا۔

مریم نے کہا کہ 2012 میں گولی لگی تھی مگر دماغ 2021 میں گیا ہے۔

ولی خان نے کہا کہ ملالہ کے روپ سے ہمارے عقیدے کو خطرہ ہے کیونکہ انہوں نے فلسطین کے معاملے پر تو کوئی واضح مؤقف نہیں دیا وہ بس اسلام کا لبادہ اوڑھے ہوئے ہیں۔

حرا خان نے کہا کہ جو لوگ ملالہ کو سپورٹ کرتے تھے وہ مایوس ہو گئے ہیں۔

فصیح الدین نے کہا کہ ان کے اس بیان نے اس کا وقت بدل دیا ہے جذبات بدل دیئے ہیں۔ زندگی بدل دی ہے۔

ملالہ یوسفزئی کے شادی سے متعلق اس بیان پر اداکارہ متھیرا نے انسٹاگرام اسٹوری پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے مجھے ووگ میگزین کے سرورق پر ملالہ کی تصویر پسند آئی۔ پھر انہوں نے ملالہ یوسفزئی کو مینشن کرتے ہوئے لکھا براہ کرم ہمیں اپنی نئی نسل کو شادی کرنے کی ترغیب دینے کی کوشش کرنی چاہئے اور یہ بھی بتانا ہے کہ نکاح کرنا سنت ہے یہ صرف کاغذات پر دستخط کرنا نہیں ہے آپ کوئی پلاٹ نہیں خرید رہے۔ بلکہ اس طرح آپ درست طریقے سے اپنی نئی اور خوشگوار زندگی کا آغاز کرتے ہیں۔

متھیرا نے مزید لکھا زبردستی کی شادی، شادی میں تشدد اور کم عمری کی شادی غلط ہے لیکن خدا کی رحمت کے سائے میں نکاح کرنا خوش آئند ہے۔ لہذا اگر آپ کو لگتا ہے کہ کسی کو اپنی زندگی میں شراکت دار بنانا اچھا ہے تو آپ اسے حلال طریقے سے کریں۔

متھیرا نے ایک اور انسٹا اسٹوری میں نکاح کے حق میں بیان دیتے ہوئے کہا اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ میں کتنی ماڈرن ہوں میں ہمیشہ اپنے بچوں کو نکاح کرنے پر زور دوں گی اور یہ سکھاؤں گی کہ شادی کے ذریعے خود کو کسی کے ساتھ باندھنا بالکل صحیح ہے اور اس رشتے میں ایک دوسرے کی مدد کرنا آپ کی زندگی کے لیے اچھا ثابت ہوگا

۔ شادی کرنا اچھی بات ہے۔ بعض اوقات شادی میں مشکلات آتی ہیں لیکن کوئی بات نہیں اللہ آپ کے لیے کسی خاص کو بھیجتا ہے۔

متھیرا نے مزید کہا ہاں میں طلاق یافتہ ہوں لیکن میں اب بھی شادی پر یقین رکھتی ہوں اور شاید جب مجھے صحیح شخص ملے تو میں دوبارہ شادی کرلوں۔ لہٰذا مہربانی کرکے مجھے بتانا بند کریں کہ میں طلاق یافتہ ہوں۔ کیا ہوا اگر میری شادی نہیں چلی۔ اکیلے رہ کر خوش رہنا بہتر ہے بجائے اس کے کہ آپ ایک ناخوشگوار شادی میں پریشان اور دکھی رہیں۔

انشرہ اخلاق نے کہا کہ سر پر دوپٹہ اوڑھے ملالہ نظر آ رہی ہیں جو مغربی تہذیب کو پرموٹ کر رہی ہیں جبکہ ننگے سر نظر آنے والی اداکارہ متھیراہیں جو کہ ان کے خیال میں ملالہ سے بہتر طریقے سے اسلام کو سمجھتی ہیں۔

کچھ صارفین نے کہا کہ وہ اب ملالہ سے زیادہ متھیرا کی عزت کرتے ہیں۔

سہیل نے کہا کہ نکاح کرنا سنت ہے کیونکہ آپﷺ نے بتا دیا ہے کہ بغیر نکاح کے مردوعورت اکٹھے نہیں رہ سکتے۔

مریم مبشر نے کہا کہ اب پتہ چل چکا ہے کہ ملالہ کا دماغ خراب ہو چکا ہے اور جو لوگ ان کے ووگ میگزین کے سرورق پر آنے کو باعث فخر سمجھ رہے ہیں ان کے لیے صرف خاموشی ہی اختیار کی جا سکتی ہے۔

  • رشتے تو آپکے ابّا کے پاس آتے ہیں تو آپ ان کا جواب میگزین کو کیوں دے رہی ہیں، ابّا سے ہی کہیں کے ای میل کے ریپلائے میں رشتہ مانگنے والوں سے کہیں کہ نکاح کی کیا ضرورت ہے ایسے ہی آ جائیں اور جتنی ہوسکے پارٹنرشپ کریں۔

  • یہ میشاشفیع والوں کو شفاء یوسفزئی کی باری کیا موت پڑی ہوئی ہے؟ ہر عورت قابل عزت نہیں یا این جی او مافیا نے صرف مخصوص ایجنڈہ چلاناہے؟

  • ملالہ نے کہا ہے کہ نکاح کے بارے میں مجھے نہیں پتا کہ سنت ہے یا نہیں لیکن میں نے سنا ہے کہ
    لڑکوں کا چھوٹی عمر میں ہی کچھ کاٹ دیتے ہیں جسے سنت کہتے ہیں…اب اس میں کیا


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >