زخمی حالت میں ڈیوٹی دینے والے ٹریفک وارڈن کے سوشل میڈیا پر چرچے

وزیراعظم عمران خان نے زخمی ٹریفک وارڈن کی جانب سے ڈیوٹی سرانجام دینے پر خراج تحسین پیش کیا ، وزیراعظم آفس ہاؤس بلا کر حوصلہ افزائی بھی کی اور فرض شناسی کی عمدہ مثال قائم کرنے پر انعام کا بھی اعلان کیا۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم آفس کی جانب سے ٹویٹر پر جاری کردہ ایک پیغام میں بتایا گیا ہے کہ عمران خان نے دوران ڈیوٹی زخمی ہوجانے والے ٹریفک پولیس اہلکار قیصر شکیل کو وزیراعظم ہاؤس بلایا اور اس کی خوب حوصلہ افزائی کی، وزیراعظم نے زخمی ہونے کے باوجود اپنے فرائض احسن طریقے سے سرانجام دینے پر قیصر شکیل کو شاباش بھی دی۔

وزیراعظم عمران خان نے قیصر شکیل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جب ایک شخص پوری تندہی کے ساتھ لوگوں کی خدمت کا فیصلہ کرے تو ایسے واقعات سے پولیس کے تشخص میں بہتری کا سبب بنتے ہیں۔

اس موقع پر شکیل قیصر کا کہنا تھا کہ اگر میرا وزیراعظم عوام کی فلاح کیلئے دن کے 24 گھنٹے اور ہفتے کے ساتوں دن کام کرسکتا ہے تو میں کیوں نہیں۔

وزیراعظم آفس کے مطابق ٹریفک پولیس اہلکار شکیل قیصر کو9 جون کو حادثہ پیش آیا جس کے نتیجے میں وہ زخمی ہوگئے تاہم صرف 2 روز کی چھٹی کے بعد شکیل قیصر 11 جون کو اپنی ڈیوٹی پر پہنچ گئے تھے۔

ٹریفک اہلکار شکیل قیصر کے جذبے کو سوشل میڈیا صارفین نے خوب سراہا، کچھ سوشل میڈیا صارفین نے سوال کیا کہ اسے اسکے افسران نے چھٹی نہیں دی ہوگی جس پر وہ ڈیوٹی کرنے پر مجبور ہوگا۔

غلام نبی مانی نے تبصرہ کیا کہ ویلڈن وزیراعظم پاکستان عمران خان جو آج ملک میں امیر غریب کے فرق کو ختم کرکے نئے پاکستان کی بنیاد ڈال رہے ہیں۔

عمران لالیکا نے لکھا کہ سپاہی قیصر کا جذبہ اپنی جگہ لیکن حقیقت یہ ہے کہ مسکین کو افسران بالا نے چھٹی نہیں دی ہوگی

جس پر سید عامر علی شاہ نے جوبا دیا کہ اگر افسران بالا نے چھٹی نہیں دی ہوگی تو افسران بالا نے بھی آج دیکھ لیا ہوگا کہ اسکی حوصلہ افزائی کیسے ہوئی اور آج اسے وزیراعظم ہاوس بلا کر وزیراعظم عمران خان نے خود شاباش دی، بیشک اللہ الحق ہے کانسٹبل قیصر شکیل کی حوصلہ شکنی نہیں ہونے دی

وکیل احمد نے تبصرہ کیا کہ وزیراعظم عمران خان نےاسلام آباد ٹریفک پولیس کے اہلکار ہیڈ کانسٹیبل قیصر شکیل کو دورانِ ڈیوٹی زخمی ہونے کے باوجود اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا کرنے پر انہیں وزیرِ اعظم ہاؤس بلا کر حوصلہ افزائی کی اور شاباشی دی۔ یہ ایک بہترین روایت ہے ، حوصلہ افزائی ضرور ہونی چاہئیے ۔

عمیر عباسی نے تبصرہ کیا کہ یہ ایک اچھی روایات ہے اس سے عوام اور اداروں کے درمیان قربٹ بڑھتی ہے۔۔شاہد خاقان وزیراعظم تھے تو موٹروے پر اوور اسپیڈ کی وجہ سے انکا چلان ہوا تو انھوں نے اس ٹریفک وارڈن کو بھی انعام دیا تھا۔

واضح رہے کچھ روز پہلے سوشل میڈیا پر وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ایک چوراہے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس پر ڈیوٹی سرانجام دینے والے ٹریفک وارڈن کے بازوپر فریکچر کی بینڈیج واضح طور پر نظر آرہی تھی، سوشل میڈیا صارفین نے اس فرض شناس ٹریفک پولیس اہلکار کی فرض شناسی کو خوب سراہا۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>