وزیراعظم عمران خان کا 2012 میں کیا گیا ٹویٹ کیوں وائرل ہورہا ہے؟

وزیراعظم کا امریکا افغانستان کے حوالے سے 2012کا ٹویٹ وائرل

وزیراعظم عمران خان نے امریکا کو اپنی سرزمین افغانستان کیخلاف استعمال کرنے سے دو ٹوک منع کردیا، جس پر صارفین کی جانب سے بھرپور پذیرائی مل رہی ہے، صارفین کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے اپنا ایک اور عدہ پورا کردکھایا۔

سوشل میڈیا پر وزیراعظم عمران خان کا 2012 کا ایک ٹویٹ وائرل ہورہا ہے،جس میں وزیراعظم نے واضح طور پر کہا تھا کہ پاکستان کو افغان جنگ میں امریکا کا غلام نہیں بننا چاہئے۔

عمران خان نے اپنے ٹویٹ میں کہا تھا کہ ہم امریکا کے دوست ہوسکتے غلام نہیں، ہم افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا میں مدد کرسکتے ہیں، لیکن امریکا کیلئے فوجی آپریشن نہیں شروع کرینگے۔

امریکی میڈیا کو انٹرویو میں عمران خان نے ایک بار پھر امریکا کو واضح پیغام دے دیا، عمران خان نے کہا کہ ایسا ممکن ہی نہیں پاکستان افغانستان کیخلاف آپریشن کیلئےامریکی سی آئی اے یا اسپیشل فورسز کو اپنی سرزمین دے۔

امریکا کی جانب سے افغانستان سے اپنی فوج کے مکمل انخلا سے قبل ہی وزیر اعظم عمران خان نے ایک بار پھر امریکی حکومت کو پاکستانی سرزمین پر فوجی اڈے قائم کرنے کی اجازت نہ دینے سے متعلق اپنی مضبوط اور واضح واضح پالیسی بتادی،جیسا کہ وزیر اعظم عمران خان نے 2012 میں ٹویٹ کیا گیا تھا ۔

انہوں نے آج ایک بار پھر اپنی پالیسی کو دہرایا، امریکی انٹرویو میں وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ یہ ہماری جنگ نہیں ہے اور پاکستان کبھی بھی کسی دوسرے ملک کی جنگ میں بلاواسطہ اور بلواسطہ حصہ نہیں لے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر یہ پاکستان کی جنگ نہیں ہے تو ، اس کی وجہ سے ہمارے لوگ کیوں جاں بحق ہوں، وزیراعظم کا مکمل انٹرویو کل رات تین بجے نشر ہوگا، انٹرویو میں وزیراعظم نے اسلامو فوبیا، کشمیر اور فلسطین کے حوالے سے بھی بات کی ہے،وزیراعظم کے امریکا کو ایبسلیوٹلی ناٹ نے صارفین کا دل جیت لیا، ٹوئٹر پر دوسرے روز بھی سراہا جارہاہے،ایبسلیوٹلی ناٹ کے بعد ایبسلیوٹلی یس بھی ٹرینڈ میں شامل ہوگیا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >