حالیہ لوڈ شیڈنگ پر وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر کی وضاحت

حالیہ لوڈ شیڈنگ پر وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر کی وضاحت

وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے کہا کہ چائنہ حب پاور پلانٹ پرآسمانی بجلی گرنے اورمنگلا ڈیم سے کم پانی کے اخراج کی وجہ سے بجلی کی پیداوارمیں کمی ہوئی ہے۔

مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر وفاقی وزیر حماد اظہر نے ایک ٹوئٹ میں بتایا کہ چائنہ حب پاور پلانٹ پرآسمانی بجلی گرنے اور منگلا ڈیم سے کم پانی کے اخراج کی وجہ سے بجلی کی پیداوارمیں کمی ہوگئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت پھر بھی بجلی کی طلب کو پورا کرنے اور ان علاقوں میں بجلی کی زیادہ سے زیادہ طلب کو پورا کرنے کے لیے کوشاں ہے، انہوں نے کہا کہ مقامی گیس کا مزید 3.75فیصد مختص کردیا گیا ہے، تاہم پاور سیکٹر کو گیس کی یہ فراہمی چند دنوں کیلئے عارضی طور پر کی گئی ہے۔

  • شہروں میں آٹھ آٹھ گھنٹے لوڈشیڈنگ ہو رہی ہے جبکہ ہمیں یہ بتایا گیا تھا کہ پاور پرڈکشن کیپیسٹی سینتیس ہزار میگاواٹ ہے اور ڈیمانڈ ۲۲ ہزار۔ ان وزیروں کو کچھ معلوم نہی کہ کتنی لوڈشیڈینگ ہو رہی ہے۔ حب پر آسمانی بجلی تو کل گری تھی جبکہ لوڈشیڈنگ گرمیوں کے شروع سے لگاتار ہو رہی ہے۔

  • Well there is surplus production capacity but transmission lines not laid to grid system to connect that power. This government also has no direction nor competent people. Why didn’t they laid transmission line from their first year in power. Imran has also lost his guile or he is too incapacitated by the current system he is in. Both ways people will blame him.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >