سنت ابراہیمی سے متعلق ٹویٹ غریدہ فاروقی کو مہنگا پڑگیا، سوشل میڈیا صارفین برس پڑے

سنت ابراہیمی سے متعلق ٹویٹ غریدہ فاروقی کو مہنگا پڑگیا، سوشل میڈیا صارفین نے غریدہ فاروقی کو آڑے ہاتھوں لے لیا، جانوروں کی بجائے اپنی کمسن ملازمہ پر رحم کرنے کا مشورہ

ملک بھر میں آج عید الاضحیٰ مذہبی جوش و جذبے سے منائی جا رہی ہے۔نماز عید کی ادائیگی کے بعد شہری سنت ابراہیمی علیہ السلام کی پیروی کرتے ہوئے اللہ کی رضا کے لیے مختلف جانوروں کی قربانی کررہے ہیں۔ قربانی کیلئے بچوں، بڑوں سب میں جوش وخروش ہے لیکن اس موقع پر غریدہ فاروقی کی طرف سے ایک نامناسب ٹویٹ دیکھنے کو ملا جس پر سوشل میڈیا صارفین نے غم وغصے کا اظہار کیا اور غریدہ فاروقی کو کھری کھری سنادیں۔

غریدہ فاروقی نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں لکھا کہ اگر ہو سکے تو کسی جانور کی زندگی بچالیں۔اپنی زندگی میں اس واقعہ (سنت ابراہیمی)اور خدا کے پیغام کے پیچھے فلسفہ کو اپنا لیں۔

غریدہ فاروقی نے مزید لکھا کہ یہ دن گوشت کھانے کیلئے مختص نہیں ہے۔ جانوروں سے محبت کریں، انہیں زندہ رہنے دیں۔

غریدہ فارقی کے اس ٹویٹ پر سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے سخت ردعمل دیکھنے کو ملا، سوشل میڈیا صارفین نے کہا کہ جب حضرت ابراہیم علیہ اسلام اللہ کے حکم پر اس کی راہ میں اپنی سب سے پیاری چیز قربان کرنے جا رہے تھے تو شیطان مردود بار بار روکنے کی کوشش کرتا رہا۔ آج جب دنیا بھر کے مسلمان سنت ابراہیمی پوری کرنے جا رہے ہیں تو غریدہ فاروقی انہیں روکنے کی کوشش کر رہی ہے

سوشل میڈیا صارفین نے کہا کہ اگر غریدہ فاروقی کو جانوروں سے اتنی محبت ہے تو میکڈونلڈ، کے ایف سی کے مہنگے برگر نہ کھایا کریں، نہاری جو انہیں پسند ہیں مت کھایا کریں اور جانوروں کی کھال سے بنے مہنگے لیدر بیگز، جیکٹس بھی استعمال نہ کیا کریں۔

آزاد منش نے تبصرہ کیا کہ غریدہ فاروقی جیسے لوگ جو ڈھائی لاکھ کا آئی فون لیتے یہ نہیں سوچتے کہ چلانا تو آتا نہیں ہے، پچاس ساٹھ ہزار والا ہی لے لوں، باقی غریبوں کی مدد کر دوں قربانی کے موقع پہ بھاشن دینے یاد آ جاتے ہیں

ملیحہ ہاشمی نے غریدہ فاروقی کو جواب دیتے ہوئے لکھا کہ غریدہ، قربانی ہم پر اللّه نے غریب اور مستحق افراد میں گوشت تقسیم کرنے کیلئے فرض کی۔ آپ قربانی نہیں کرنا چاہتیں تو جس فون سے ٹویٹ کر رہی ہیں، بےشک اسے بیچ کر کسی کی مدد کر دیں سارا سال KFC اور مٹن کھاتےکوئی مسئلہ نہیں ہوتا، عید پر قربانی کرتےہوئے جانوروں کےحقوق یاد آ جاتے ہیں۔

غریدہ فاروقی کی کچھ سال پہلے ایک سامنے آئی تھی جس میں اس نے اپنی نوکرانی پر تشدد اور حبس بے جا میں رکھا تھا اور ایک آڈیو بھی لیک ہوئی تھی جس میں اس نے اپنی کمسن نوکرانی کو گالیاں دی تھیں اور اسکےلئے حرامزادی کا لفاظ استعمال کیا تھا۔

اسی کو بنیاد بناکر ایک سوشل میڈیا صارف نے طنزیہ پیغام لکھا کہ اپنے اندر کے جانور کی قربانی ضروری ہے ۔ جانوروں سے پیار کریں جیسے میں اپنی نوکرانی سے کرتی ہوں (غریدہ فاروقی کا عید پر پیغام)

یوسف نے لکھا کہ غریدہ فاروقی نے اپنی عجیب منطق پیش کی ہے ۔مسلم ہونے کی حیثیت سے اس سوچ برأت کا اظہار کرتا ہوں

ایک سوشل میڈیا صارف نے لکھا کہ یہ غریدہ فاروقی اس نے بیگ ہمیشہ لیدر کا ہی لیا ہو گا اور جوتا بھی یقیناً لیدر کا ہی پہنتی ہو گی یا پھر خواہش تو ضرور ہو گی، سردیوں میں لیدر جیکٹ اور فر والا کوٹ بھی پسند ہو گا ، بس اگر نہیں پسند تو سنتِ ابراہیمی نہیں پسند۔

فرحان نے تبصرہ کیا کہ غریدہ فاروقی کا دماغ چل گیا ہے کیا؟ قربانی اسلامی شعائر و فرائض میں سے ہے ہر جگہ فلاسفی نہیں مارنی چاہیے ـ افسوس ہے ایسی سوچ پر

اسداللہ نے لکھا کہ آپ لوگ میک ڈونلڈز ، کے ایف سی ، برگر کنگ وغیرہ سے کھائیں گے ، جو اپنے مہنگے کھانوں کے لئے سالانہ اربوں جانوروں کو مار دیتے ہیں۔لیکن جب مسلمان کسی جانور کی قربانی دیتے ہیں تو اسے غریبوں یا مساکین میں مفت تقسیم کرتے ہیں ، ہر کوئی جانوروں کے حقوق کے چمپئین جاتے ہیں

جنید نسیم نے غریدہ فاروقی کے ایک پرانے ٹویٹ کا سکرین شاٹ شئیر کیا جس میں وہ کہتی ہیں کہ انہیں نہاری پسند ہے۔

جنید نسیم نے لکھا کہ غریدہ فاروقی کو کھانے میں گوشت پسند ہے۔ اچھی نہاری کھانے کو محترمہ مری ہی جا رہی تھی۔ لیکن اس نے یہ نہیں بتایا کے نہاری کون سے درخت سے توڑ کر کھاتی ہے!

ایک اور سوشل میڈیا صارف نے غریدہ فاروقی کا سکرین شاٹ شئیر کرتے ہوئے لکھا کہ آپ نے اس نہاری سے لطف اندوز ہونے کے لئے کس فلسفے کو شرمندہ تعبیر کیا؟

  • Gharida Farooqi was actually trying to please her Master Modi & RSS’s "Go Rakhsa Dal”….
    And definitely she will be immense popular among Modi’s Bhaktas same as Hamid Mir Jafar, Asma Shiraji, Maryam Safdar etc..etc.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >