راجہ فاروق حیدر کے کشمیریوں کو غلامانہ سوچ کے مالک قرار دینے پرسخت ردعمل

وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر کے کشمیریوں کو غلامانہ سوچ کا قرار دینے پر سوشل میڈیا صارفین کا سخت ردعمل۔۔سوشل میڈیا صارفین نے اسے کشمیریوں کی توہین قرار دیتے ہوئے راجہ فاروق حیدر کو بیمار ذہنیت کا شخص قرار دیدیا

آزاد کشمیر کے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر نے آزاد کشمیر الیکشن میں اپنی جماعت کی شکست دیکھ کر کشمیری عوام کی توہین کردی اور کشمیریوں کو غلامانہ سوچ کا مالک قرار دے دیا۔

نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم آزادکشمیر اور مسلم لیگ ن کے رہنما راجہ فاروق حیدر نے اپنی جماعت کی شکست دیکھ کر آزاد کشمیر کے عوام کو غلامانہ سوچ کا حامل قرار دیا۔

انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ ’کشمیری 250سال سےغلامی میں ہیں اور آج بھی وہ اس سوچ سے باہر نہیں نکل سکے‘۔ راجہ فاروق حیدر نے کہا کہ ’آج کےالیکشن کےنتائج بھی غلامانہ سوچ کی عکاسی کرتے ہیں‘۔

راجہ فاروق حیدر کے اس بیان پر سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے سخت ردعمل دیکھنے کو ملا، سوشل میڈیا صارفین نے اسے کشمیریوں کی توہین اور بیمار ذہنیت قرار دیتے ہوئے کہا کہ جس آزادکشمیر نے آپکو 5 سال وزیراعظم بنایا ، انہی کو غلام کہہ رہے ہیں۔

راجہ فاروق حیدر کے اس بیان پر تحریک انصاف نے ردعمل دیا کہ شکست خوردہ ن لیگ کے وزیراعظم اپنی جماعت کی ہار برداشت نہ کرسکے، ن لیگ کی شکست کا ذمہ دار ّکشمیریوں کی ” غلامانہ سوچ ” کو قرار دے دیا ۔ یہ الیکشن عکاسی کرتا ہے کہ کشمیری پچھلے اڑھائی سو سال سے غلامی کی زندگی جی رہے ہیں-

تحریک انصاف کی وزیر زرتاج گل نے ردعمل دیا کہ راجہ فاروق حیدر کے کشمیریوں کے بارے میں بیان کی شدید مذمت کرتی ہوں۔ قوم کے غدار نواز شریف کے پیروکار سے اور توقع بھی کیا کی جا سکتی تھی؟ اس بے بسی کے بیان سے یہ بھی ظاہر ہو گیا کہ مریم صفدر کا دھاندلی کا دعوی مضحکہ خیز ہے۔ کشمیریوں نے نون لیگ کو رد کیا ہے۔

صحافی طارق متین نے راجہ فاروق حیدر کی تصویر شئیر کرتے ہوئے طنز کیا کہ کشمیری غلام ہیں اور یہ بھگت سنگھ ہے

طارق متین نے مزید کہا کہ نواز شریف کا انتخاب سابق وزیراعظم آزاد کشمیر ہار گیا تو کشمیریوں کو غلام کہہ رہا ہے۔ مریم نواز صاحبہ آپ اصلی کشمیری ہیں ناں یہ آدمی آپ کو اصلی غلام کہہ رہا ہے۔

میر محمد علی خان نے ردعمل دیا کہ تُف اس انسان پر کہ ہار گیا تو اپنے ہی ووٹرز کو غُلام کہہ رہا ہے۔ کشمیری ہمیشہ ایک غیّور قوم تھی ہے اور رہیگی۔ میرا سلام تمام کشمیریوں کو

نعیم بٹ کا کہنا تھا کہ یہ ن لیگ کا وطیرہ ہے۔ ایاز صادق نے کہا تھا جو پنجابی عمران خان کو ووٹ ڈالے گا وہ بے غیرت ہے۔ آج راجہ فاروق حیدر نے تحریک انصاف کی جیت پہ کہہ دیا ہے کہ آزادکشمیر کے لوگ آج بھی غلامانہ سوچ سے نہیں نکل سکے۔ یہ ہے ووٹ کی عزت؟ کہ جو ن لیگ کو ووٹ نہ دے وہ بےغیرت اور غلام ہے؟

جوکر کا کہنا تھا کہ ن لیگ کے راجہ فاروق حیدر نے کشمیریوں کو غلام کہا۔ کشمیری غلام ہوتے تو آج انڈیا کیساتھ الحاق کر چکے ہوتے، کشمیری غلامانہ سوچ رکھتے تو آزادی کیلئے ڈیڑھ لاکھ سے زائد کشمیری قربانی نہ دیتے۔ کشمیری موت کو گلے لگاتے ہیں مگر غلامی قبول نہیں کرتے۔

محمدامین کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر کے سابق وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر نے کشمیریوں کو غلامانہ سوچ کا حامل قرار دے دیا ۔انہیں یہ بات کرتے ہوئے شرم نہیں آئی کہ یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے انہیں وزیر اعظم بنایا تھا مگر آزاد کشمیر کے لوگوں نے نہیں شریف خاندان کا غلام ہونے کی وجہ سے ووٹ نہیں دیا ۔

عمر فاروق کا کہنا تھا کہ پانچ سال آزاد کشمیر میں وزیراعظم بنے رہنے کے بعد راجہ فاروق حیدر کو ذلت آمیز شکست ہوئی اور اب پوری کشمیری قوم کو نسلی غلام کہا جا رہا ہے۔ اس شخص کا دور آزاد کشمیر کا سیاہ ترین دور تھا ۔ کشمیریوں ایسے غلام انسان سے چھٹکارے پر بہت مبارکاں۔

ڈاکٹر فاطمہ نے تبصرہ کیا کہ یہ ہے نون لیگی راجہ فاروق حیدر!! یہ اس وقت بھی آزاد کشمیر کا وزیر اعظم ہے۔اپنی شکست کھلے دل سے تسلیم کرنے کے بجائے یہ کشمیریوں کو غلام اور غلامانہ سوچ کا مالک کہ رہا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >