پب جی پر پابندی ہونی چاہئے یا نہیں؟ کلاسرا اور عدیل راجہ میں دلچسپ مکالمہ

پاکستان میں پب جی پر پابندی پر رؤف کلاسرا کی عدیل راجہ کے ساتھ دلچسپ گفتگو۔۔۔پب جی پر پابندی ہونی چاہئے یا نہیں،پب جی میں بھی پاک بھارت کشیدگی حاوی۔۔ پب جی سے لوگ لاکھوں کما رہے ہیں، پاکستان میں ہرمسئلے کا حل پابندی ہے؟

عدیل راجہ نے پب جی سے متعلق دلچسپ حقائق شئیر کئے اور بتایا کہ اس گیم کو "ہنگر گیمز ناول” کو سامنے رکھ کر بنایا گیا۔ یہ دنیا میں سب سے زیادہ کھیلی جانیوالی گیم ہے، اسکے 600 ملین سے زائد ڈاؤن لوڈ ہیں، یہ 2017 میں آئی تھی اور 2018 میں ون بلین ڈالر کی گیم بن گئی تھی۔عدیل راجہ کے مطابق پب جی گیم بنانیوالا نوجوان 38 برس کا ہے جو گیم بناکر فارغ بیٹھا ہے، اسکے پاس اس گیم سے اچھا خاصہ پیسہ آرہا ہے، اسے اور کوئی کام کی ضرورت نہیں۔

عدیل راجہ نے بتایا کہ اس گیم کو تین چار ملکوں نے بین کیا ہے، ان میں نیپال، انڈیا کی کچھ ریاستیں، عراق اور چوتھا ملک پاکستان ہے۔ یہ گیم آپ 5 گھنٹے سے زیادہ کھیل نہیں سکتے، آپ دو گھنٹے کھیلیں تو نوٹس آتا ہے کہ 30 منٹ کا بریک لیں، اسکے بعد دوبارہ آپ کھیلنا شروع کرتے ہیں تو پانچ گھنٹے بعد آپ کو نوٹس آتا ہے کہ آج آپ نے بہت کھیل لیا، آپ کل فلاں وقت پر لاگ ان ہوسکتے ہیں۔

عدیل راجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اس گیم کو بین کرنے کی وجہ والدین کی شکایات ہیں کہ اس گیم کی وجہ سے بچے خودکشی کررہے ہیں، بچے کے نمبر کم آئیں تو کیا سکول بین کردیں؟ اس گیم کی وجہ سے کئی لوگوں کا روزگار چل رہا ہے، لوگ گھر بیٹھے اچھے خاصے پیسے کمارہے ہیں، عدیل راجہ نے گیم بین کرنے پر پی ٹی اے کو تنقید کا نشانہ بھی بنایا۔

رؤف کلاسرا کا کہنا تھا کہ والدین کی شکایات بھی جائز ہیں، بچے پڑھتے نہیں ہیں، ہر وقت موبائل پر گیم کھیلتے رہتے ہیں جس پر عدیل راجہ نے کہا کہ آپ بچے کے ہاتھ میں موبائل کیوں دیتے ہیں؟ آپ پب جی بین کریں گے تو دس گیمیں اور ہیں۔ رؤف کلاسرا نے کہا کہ یہ گیمیں بچوں کو تشدد پسند بنارہی ہیں جس پر عدیل راجہ نے کہا کہ دیہاتوں میں جہاں انٹرنیٹ نہیں ، یہ گیم نہیں وہاں بھی دن میں 20، 20 بندے قتل ہورہے ہیں۔

عدیل راجہ نے انکشاف کیا کہ گیم میں بھی پاکستانی یوتھ لڑرہی ہے۔ انڈین پلئیرز کے ساتھ گالم گلوچ بھی ہوجاتی ہے، عدیل راجہ کے مطابق ہمارے ساتھ ترکی، سعودی عرب، چین والے بہت اچھا انٹرایکٹ کرتے ہیں، بنگلہ دیش والے ہمیں ناپسند کرتے ہیں۔

  • Just stupid fool this buffoon is saying that video games are good. These things are just evil. This ignorant does not even know there has been tons of research on this topic and everyone has concluded is this that these video games only improve the scanning and movement of finger capabilities of brain, and rest of the brain start to go down in kind of dormant mode.  And Rauf Klasra is praising this idiot. Because of ample availability of these kind of idiots in our country retarded

    Like this retarded guy


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >