ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر پاکستان کے تین ایتھلیٹس پر چار سال کی پابندی عائد

ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر پاکستان کے تین ایتھلیٹس پر چار سال کی پابندی عائد

پاکستان کے تین ایتھلیٹس پر ڈوپ ٹیسٹ کی رپورٹ مثبت آنے کے بعد چار سال کی پابندی عائد کر دی گئی ہے، جن تین کھلاڑیوں پر پابندی لگائی گئی ہے ان میں محبوب علی، محمد نعیم اور سمیع اللہ شامل ہیں، تینوں کھلاڑیوں کا ڈوپ ٹیسٹ ساؤتھ ایشین گیمز کے دوران مثبت آیا تھا۔

تینوں ایتھلیٹس کے ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے کی وجہ سے پاکستان 5 میڈلز سے بھی محروم ہو گیا ہے، تاہم تینوں کھلاڑیوں پر واڈا قوانین کے مطابق چار چار سال کی پابندی لگا دی گئی ہے، پابندی عائد ہونے کے بعد تینوں کھلاڑی کھیل کی کسی بھی سرگرمی میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر پاکستان کے تین ایتھلیٹس پر چار سال کی پابندی عائد

ایتھلیٹس کے ڈوپ ٹیسٹ کی رپورٹ مثبت آنے کے حوالے سے ساؤتھ ایشین گیمز کی انتظامی کمیٹی نے پاکستان کی ایتھلیٹکس فیڈریشن کو آگاہ کردیا ہے، لیکن فیڈریشن کی جانب سے تاحال کھلاڑیوں پر پابندی سے متعلق تصدیق کا کوئی اعلان نہیں کیا گیا، پابندی عائد ہونے پر تینوں ایتھلیٹس کو پاکستان سپورٹس بورڈ کی جانب سے ملنے والی پرائز کی رقم بھی واپس کرنا پڑے گی۔

خیال رہے کہ ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے کے حوالے سے تینوں ایتھلیٹس نے نوٹس کے جواب میں قوت بخش ادویات استعمال کرنے سے انکار کرتے ہوئے بی سیمپل کے لیے جانے کا کہا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >