کامران اکمل سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ ناروا سلوک پر پی سی بی پر برس پڑے

قومی کرکٹ ٹیم کے وکٹ کیپر اور بیٹسمین کامران اکمل کی جانب سے سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ ناروا سلوک پر پاکستان کرکٹ بورڈ سے اظہار ناراضگی کیا گیا ہے، کامران اکمل نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ کو خط بھی لکھ دیا ہے۔

کامران اکمل کا پی سی بی کو لکھے گئے خط میں کہنا تھا کہ "پچھلے کچھ عرصے سے سینئر کھلاڑیوں کو مسلسل نظر انداز کیا جا رہا ہے، جب کہ پی سی بی سینئر کھلاڑیوں کو نظر انداز کرنے کی بجائے کوئی اہم ذمہ داری بھی سونپ سکتا ہے، پی سی بی کو سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ روا رکھا جانے والا رویہ بدلنا ہوگا۔

کامران اکمل کا اپنے خط میں کہنا تھا کہ ” پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے سینیئر کھلاڑیوں کے ساتھ اپنائے جانے والے رویے سے سینئر کھلاڑی دور ہو رہے ہیں جس کا نقصان پاکستان کی کرکٹ کو پہنچ رہا ہے، قومی ٹیم کے بعد ڈومیسٹک کرکٹ میں بھی سینئرز کے ساتھ ناروا سلوک برتا جارہا ہے، پی سی بی ، کوچنگ سٹاف اور کھلاڑیوں میں کوآرڈینیشن کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔

کامران اکمل کا سنٹرل پنجاب کے کوچ کی جانب سے پرفارم کرنے کے باوجود ٹیم سے الگ کئے جانے پر شدید ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے اپنے خط میں  کہنا تھا کہ "سنٹرل پنجاب کے کوچ نے پرفارم کرنے کے باوجود مجھے ٹیم سے الگ کردیا جب کہ ماضی میں کبھی بھی سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ  ایسا سلوک نہیں کیا گیا، تاہم پی سی بی سے احتجاج ریکارڈ کروانا میرا حق تھا اور میں نے اپنی شکایت بذریعہ ای میل پی سی بی کو ارسال کر دی ہے۔

سابق وکٹ کیپر کا محمد عامر کی قومی ٹیم سے علیحدگی کے اعلان پر بھی اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ محمد عامر اور سمیع اسلم کے علیحدہ ہونے پر پی سی بی کی جانب سے دیا گیا افسوس کا بیان سن کر بہت حیرت ہوئی، میرے لیے یہ بھی حیرانی کی بات تھی کہ چیئرمین کرکٹ بورڈ کی جانب سے بھی اس کا کوئی نوٹس نہیں لیا گیا، جبکہ انہیں ایسے معاملات کا نوٹس لینا چاہیے تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >