سابق بھارتی اولمپئین ملکھا سنگھ کا کورونا کے باعث 91 برس کی عمر میں انتقال

بھارت کے سابق اولمپئین ملکھا سنگھ 91 سال کی عمر میں کورونا وائرس کے باعث انتقال کر گئے ہیں۔ کچھ روز قبل ہی انکی اہلیہ کا بھی انتقال ہوگیا تھا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ملکھا سنگھ گزشتہ ایک ماہ سے کورونا کے باعث تشویشناک حالت میں ایک ہسپتال میں زیرعلاج تھے جہاں آج ان کی موت واقع ہوئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملکھا سنگھ کے بیٹے نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے والد کی موت کی تصدیق کی ہے۔

یاد رہے کہ 5 روز قبل ہی ملکھا سنگھ کی اہلیہ اور بھارتی والی بال ٹیم کی سابق کپتان نرمل کور بھی انتقال کر گئیں تھیں۔ ملکھا سنگھ کی اہلیہ بھی کورونا سے متاثر تھیں اور انہوں نے اتوار کی شام 4 بجے آخری سانس لی۔

ان کی آخری رسومات اتوار کے روز ہی چنڈی گڑھ میں ادا کی گئیں۔

واضح رہے کہ ملکھا سنگھ 1929 میں پیدا ہوئے تھے۔ انہیں ’’ دی فلائنگ سکھ “ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ۔ملکھا سنگھ کو فلائنگ سنگھ کا خطاب پاکستان کے سابق صدر جنرل محمد ايوب خان نے دیا تھا۔

ملکھا سنگھ نے پہلے بھارتی فوج اور پھر بھارت کی نمائندگی کی اور کئی بین الاقوامی مقابلوں اور اولمپکس میں بھی حصہ لیا۔ملکھا سنگھ نے ایشین گیمز میں 4 گولڈ میڈلز جیتے تھے۔

ملکھا سنگھ پر بھارت میں "بھاگ ملکھا بھاگ” فلم بھی بن چکی ہے جس میں ملکھا سنگھ کا کردار فرحان اختر نے کیا تھا

یادرہے کہ ملکھا سنگھ اور عبدالخالق دونوں ایک ہی زمانے کے پلئیر تھے۔ لیکن افسوس کہ بھارت نے ملکھا سنگھ پر فلم بنائی، کتاب لکھی اور اسے ایوارڈ دیا اور ہم نے اپنےکھلاڑی عبدالخالق کو بالکل ہی نظرانداز کردیاحالانکہ عبدالخالق ملکھا سنگھ سے بھی اچھا کھلاڑی تھا اور اس کا ریکارڈ ملکھا سنگھ سے بھی شاندار تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >