پٹھانوں سے متعلق بیان مہنگا پڑگیا، پاکستانی اولمپئن ماہور شہزاد نےمعافی مانگ لی

قومی بیڈمنٹن چیمپئن اور اولمپکس میں بھی پاکستان کی نمائندگی کرنے والی ماہور شہزاد نے خیبرپختونخوا سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں کے خلاف اپنےجملوں پر معذرت کر لی۔ ماہور شہزاد بعض کھلاڑیوں کی جانب سے اولمپکس میں اپنی شمولیت پر ہونے والی تنقید برہم ہوئی تھیں۔

اپنے ویڈیو بیان میں انہوں نے خیبرپختونخوا کے کھلاڑیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ مجھ سے حسد کر رہے ہیں، پاکستان کی نمبر ون ہونے کی وجہ سے مجھے انٹری ملی تھی، میرا نام آئی او سی اور عالمی بیڈ منٹن فیڈریشن کو بھیجا گیا تھا۔ اس پر نکتہ چینی کے بعد رات دیر سے انہوں سوشل میڈیا پر معافی مانگ لی۔

کھلاڑی نے کہا کہ میرا کسی بھی طرح سے نسل پرستانہ تبصر ے کا ارادہ نہیں تھا۔ مجھے اپنے پختون بھائیوں اور بہنوں کے جذبات مجروح کرنے پر دل سے افسوس ہے۔

یاد رہے کہ ماہور شہزاد نے اپنی گزشتہ ویڈیو میں کہا تھا کہ لوگوں نے میری تعریف کی ، لیکن کچھ بیڈمنٹن کھلاڑی ہیں جو مکمل طور پر پٹھان ہیں۔ میں پاکستان میں پہلے نمبر پر ہوں ، لیکن ہمارے باقی پاکستانی بیڈمنٹن کھلاڑی میری ترقی سے بہت زیادہ جل رہے ہیں۔ یہ اس طرح ہے کہ آپ نہ تو خود کچھ حاصل کرتے ہیں ، اور نہ ہی آپ چاہتے ہیں کہ کوئی اور حاصل کرے۔

جس کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے24 سالہ کھلاڑی کے بیان پر سخت مذمت کی۔ سوشل میڈیا صارفین کے ردعمل پر ماہور نے ایک اور ویڈیو شیئر کی ہے۔ جس میں انہوں نے کہا میں اپنے تمام پشتون بھائیوں اور بہنوں سے معذرت خواہ ہوں کیوں کہ آپ کو میری باتوں سے تکلیف پہنچی ہے۔

انہوں نے کہا تمام پاکستانی میرے لئے قابل احترام ہیں کیونکہ میں جس مقام پر پہنچی وہ میرے مداحوں کی وجہ سے ہے۔ لیکن میں چاہتی ہوں کہ آپ بھی مجھے سمجھیں۔ ہمارے کچھ بڑے بیڈمنٹن کھلاڑیوں کو معلوم ہوا کہ میں اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کروں گی تو انہوں نے اخبارات میں میرے خلاف منفی خبریں دیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >