پی سی بی کی بھارتی کرکٹ بورڈ کو سخت وارننگ

PCB India

ایشیا کپ چھوڑا تو پاکستانی ٹیم اگلے برس بھارت نہیں جائے گی، پی سی بی کی بھارتی کرکٹ بورڈ کو سخت وارننگ

پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ بھارت نے پاکستان کی میزبانی میں ایشیا کپ چھوڑا تو ہم بھی اگلے سال بھارت میں T20 کھیلنے نہیں جائیں گے

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو وسیم خان نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہ اگر بھارت نے ایشیا کپ چھوڑا تو پھر وہ بھی آئندہ برس ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کھیلنے بھارت نہیں جائیں گے۔

انکا کہنا تھا کہ یہ تاثر بھی درست نہیں کہ ایشیائی ایونٹ کے حقوق بنگلا دیش کو دینا چاہتے ہیں۔

گزشتہ روز میڈیا سے گفتگو میں چیف ایگزیکٹو آفیسر پی سی بی وسیم خان کا کہنا تھا کہ وہ پاکستانی ٹیم آئندہ برس بھارت میں شیڈول ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کیلئے ہرگز نہیں بھیجیں گے، اگر بھارتی کرکٹ بورڈ نے اپنی ٹیم ایشیا کپ کیلئے پاکستان نہ بھیجی، جس کا انعقاد رواں برس ستمبر میں ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ سے قبل مختصر فارمیٹ میں کیا جائے گا۔

وسیم خان نے اس تاثر کو یکسر مسترد کیا کہ پی سی بی ایشیا کپ کی میزبانی کے حقوق کسی ’’ڈیل‘‘کے تحت بنگلا دیش کو دینا چاہتا ہے جس نے اپنی ٹیم پاکستان کے دورے پر بھیجی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو ایشیائی ایونٹ کی میزبانی کے حقوق ایشین کرکٹ کونسل نے دیئے ہیں جو کسی اور کو نہیں تھمائے جا سکتے کیونکہ انہیں اس بات کا اختیار ہی حاصل نہیں ہے، البتہ بھارت کے ساتھ تنازع کے باعث فی الوقت ایشیا کپ کی میزبانی کیلئے دو وینیوز قابل غور ہیں۔

وسیم خان نے تصدیق کی کہ کرکٹ جنوبی افریقہ کا سکیورٹی وفد حفاظتی انتظامات کا جائزہ لینے کی غرض سے فروری میں پاکستان آئے گا کیونکہ پی سی بی پروٹیز ٹیم کو پی ایس ایل کے بعد مارچ اور اپریل میں تین ٹی ٹونٹی میچوں کیلئے پاکستان مدعو کرنا چاہتا ہے۔

آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو مانو ساہنی کے حالیہ دورہ اسلام آباد اور لاہور سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ پی سی بی 2023ء سے 2031ء کے سائیکل میں تین آئی سی سی ایونٹس کی میزبانی حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>