معافی مانگنے کے بعد سلیم ملک نے اپنا موقف بدل لیا

کلیئر ہونے کے باوجود میرے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیوں کیا جا رہا ہے؟ عدالت اور پی سی بی دونوں ہی مجھے کلئیر قرار دے چکے ہیں۔ سلیم ملک

معافی مانگنے کے بعد سلیم ملک نے اپنا موقف بدل لیا۔ انہوں نے کہا شائقین کی دل آزاری پر معذرت کی میچ فکسنگ نہیں کی۔

ویڈیو لنک کے ذریعے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کلیئر ہونے کے باوجود میرے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیوں کیا جا رہا ہے؟ مجھے تو لگتا ہے جیسے اس ملک کا شہری ہی نہیں ہوں۔

انکا کہنا تھا جسٹس قیوم رپورٹ پر تو عدالت اور پی سی بی دونوں ہی مجھے بے قصور قرار دے چکے ہیں،اس رپورٹ کے تحت جن کرکٹرز نے جرمانے ادا کیے وہ بورڈ میں ملازمت اور کوچنگ کررہے ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ گذشتہ دنوں ویڈیو میں میری معافی کو جس انداز میں پیش کیا گیااس پر حیران ہوں، میں نے میچ فکسنگ پر نہیں بلکہ شائقین کی دل آزاری پر معذرت کی تھی۔

سلیم ملک کا مزید کہنا تھا کہ آئی سی سی یا بورڈکی جانب سے آج تک مجھے کوئی سوالنامہ نہیں ملا، لندن میں جن روابط کا ذکر ہورہا ہے اس حوالے سے بورڈ مجھ سے رابطہ کرکے بات کرے گا تو وضاحت دینے کے قابل ہوں گا، مجھے سوالنامہ بھیجا گیا توآئی سی سی اور پی سی بی کے ہر سوال کا جواب دینے کیلیے تیار ہوں۔

سلیم ملک نے دعویٰ کیا کہ وزیر اعظم بننے سے پہلے عمران خان ملاقاتوں میں کہتے رہے کہ آپ کے ساتھ ناانصافی ہورہی ہے۔

یاد رہے اس موقع پر انھوں نے یہ واضح نہیں کیا کہ شائقین کی دل آزاری فکسنگ نہیں تو کس بات پر کی تھی۔

  • Unfortunately there are several players who were involved either in match fixing or spot fixing.There are several big names often came in media regarging fixing issue like Waseem , Waqar , Saeed Anwar ,Saleem malick and several others .
    There must be a investigation to clear their name or to punish them if found guilty after the investigation .


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >