فکسنگ کیس: عمر اکمل نےاپنے بیان کی ریکارڈنگ خود چلوانے کے بعد کیوں رکوا دی؟

وکلا کے دلائل انگریزی کے بجائے اردو میں سنائے جائیں،عمراکمل

مڈل آرڈر بیٹسمین عمرن اکمل کے خلاف فکسنگ کیس کے تفصیلی فیصلے میں یہ بات سامنے آئی کہ عمر اکمل بغیر کسی وکیل کے پیش ہوئے،انہوں نے مطالبہ کیا کہ پی سی بی کے وکیل اور ان کے ساتھی کےدیئے گئے انگریزی دلائل ان کو اردو میں سنائے جائیں،اس پرپی سی بی کے وکیل تفضل رضوی نے ترجمہ کرکے بتا دیا۔

سب سننے کے عمر اکمل نے کہا کہ میرا وہی جواب ہے جو اس سے قبل تحریری طور پر دے چکا ہوں۔عمر اکمل سے پوچھا گیا کہ آپ نے بھی تو اپنا جواب انگریزی میں جمع کرایا ہے تو انہوں نے کہا کہ میری مرضی کے مطابق کسی سے لکھوایا گیا ہے۔

فکسنگ کیس کی سماعت کے دوران عمراکمل نے اپنے بیان کی ریکارڈنگ چلوائی پھر رکوا دی۔

ڈسپلنری پینل کے تفصیلی فیصلے کے مطابق عمراکمل سے کہا گیا کہ سچ بولنے پر رعایت مل سکتی ہے لیکن وہ خاموش رہے، پھر مطالبہ کیا کہ کراچی میں ان کا جو بیان ریکارڈ کیا گیا تھا وہ سنایا جائے، تھوڑی دیر بعد ہی انہوں نے کہا کہ روک دیں اس میں میرے گھر کے معاملات کا بھی ذکر ہے۔

یہاں یہ بتانا ضروری ہے کہ خفیہ رپورٹ کی روشنی میں کراچی میں عمر اکمل کا بیان ریکارڈ کیا گیا تو انہوں نے ملاقاتوں کا اعتراف کیا لیکن حقائق کو جھٹلانے اور اپنا دامن بچانے کی کوشش کرتے رہے۔

  • کرپشن ہمارے معاشرے کا ایسا ناسور ہے جو ہمیں تباہ کردے گا۔

    میچ فکسنگ پہ صرف پابندی لگنا کافی نہیں ہے۔ جرمانہ اور قید بھی ہونی چاہیے۔

  • عمر اکمل، کامران اکمل، شعیب ملک، مصباح الحق

     

    یہ سب جواری ہیں۔ الٹا مصباح حر۔۔ کوچ بنا دیا گیا۔

  • معماملے کی نزاکت کو سمجھیں۔ 2 بالوں کے 2 لاکھ ڈالر۔ اور اگر پکڑا گیا اور سزا ہوئی تو 4 لاکھ ڈالر۔  دَھندے کا کاروبار بڑی ایمانداری سے ہوتا ہے۔ خوش ہو رہے ہیں کہ سزا دے دی۔ عمر اکمل اپنے سر پرستوں کو ہوشیاری سے  بچا گیا۔ ایف ۔ اآئی ۔ اے۔  کو کیس جاتا  تو 4 لاکھ ڈالر بھی رکور ہوتے اور سرپرستوں کا بھی پتا چل جاتا۔ اب بھی نیب اگر چاہے (صرف ایک گھنٹہ نیب آفس میں گزار لے)  تو یہ جوئے کا کاروبار بے نقاب ہو سکتا ہے۔  (افسوس پی۔سی۔بی۔ ایسا نہیں چاہے گی کیوں کہ خود ملوث ہے)۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >