دھونی کے کشمیر میں داخل ہوتے ہی کشمیریوں نے بوم بوم آفریدی کے نعرے لگادیئے

شاہد آفریدی کے کشمیر کے حق میں بیان کے بعد کشمیری نوجوانوں نے ایم ایس دھونی کے سامنے بوم بوم آفریدی کے نعرے لگا دیئے۔

کشمیر میں انسانیت سوز لاک ڈاؤن کو 200 دن سے زائد گزر چکے ہیں، لیکن اقوام متحدہ سمیت تمام انسانی حقوق کے ٹھیکیدار ادارے سوائے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں، لیکن یہ لاک ڈاؤن اور کرفیو کشمیریوں کے جذبہ آزادی کو ایک فیصد بھی کم نہیں کرسکا، اور کشمیری پاکستان کے ساتھ اپنے جذباتی لگاؤ کے اظہار کا کوئی موقع ضائع نہیں کرتے ایسا ہی ایک واقع کشمیر میں اس وقت پیش آیا جب بھارتی فوج کے منعقد کردہ ایک ٹورنامنٹ میں سابق کپتان مہندرا سنگھ دھونی کو مہمان خصوصی کے طور پر کشمیر دعوت دی گئی۔

کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے دنیا کو دکھانے کیلئے کشمیری نوجوانوں کی بڑی تعداد کو زبردستی گراؤنڈ میں اکھٹا کیا تاکہ دنیا کو یہ پیغام دیا جاسکے کہ وادی میں حالات نارمل ہوگئے ہیں، جیسے ہی مہندرا سنگھ دھونی گراؤنڈ میں داخل ہوئے تماشائیوں میں موجود چند نوجوانوں نے بوم بوم آفریدی کے نعرے لگانا شروع کردیا۔

جیسے ہی بھارتی فوج کی جانب سے نعرہ لگانے والے نوجوانوں کو چپ کروانے کی کوشش کی گئی یہ نعرہ پورے میدان میں موجود نوجوانوں کی زبانوں پر آگیا اور چند نوجوانوں کی سرگوشیوں میں کہا جانے والا بوم بوم آفریدی پورے میدار میں نعرہ بن کر گونجنے لگا۔

نعرے کو سن کر بھارتی آرمی افسران کے چہرے پر پریشانی کی شدید تاثرات ابھرنے لگے لیکن کشمیری نوجوانوں نے اپنی آواز کو کم نہیں کیا اور پوری کوشش کی کہ وہاں موجود ہر بھارتی کے کان میں یہ آواز پہنچ جائے۔

یاد رہے کہ شاہد آفریدی نے آزاد کشمیر میں بھارت کی جانب سے مقبوضہ وادی میں جاری مظالم کے خلاف بیان دیئے تھے جس کے بعد بھارتی کرکٹرز کی جانب سے سخت ردعمل سامنے آیا ہربھجن سنگھ سمیت دیگر بھارتی کھلاڑیوں نے شاہد آفریدی سے دوستی ختم کرنے کا اعلان کردیا تھا۔

  • اس طرح کسی کی زبان بند نہیں کی جا سکتی۔ بھارتی کھلاڑیوں میں اگر ہمت نہیں ہے کہ سچ بات کہہ سکیں کم از کم خاموش تو رہ سکتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >