عمران خان کی طرح جارحانہ طریقے سے ٹیم کی قیادت کرنا چاہتا ہوں،بابر اعظم

پی سی بی کی جانب سے بابر اعظم کو ٹی20 کے بعد ون ڈے کرکٹ فامیٹ کا بھی کپتان مقرر کر دیا گیا جبکہ ٹیسٹ ٹیم کی قیادت اظہر علی ہی کریں گے ۔ بابراعظم نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ قومی ٹیم کی جارحانہ انداز میں قیادت کرنا چاہتے ہیں۔
بابر اعظم نے کہا کہ میں نے جارحانہ انداز میں کھیلنا سیکھا ہے اور اسی وجہ سے عمران خان کے انداز سے ٹیم کی قیادت کرنے کی کوشش کروں گا۔

بابراعظم نے کہا کہ بطور کپتان بڑے صبر کے ساتھ مخالف ٹیم کے خلاف کھیل میں منصوبہ بندی کرنا ہوتی ہے اور اپنے کھلاڑیوں کو بھی ساتھ رکھنا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کھیل کے دوران کئی بار بہت غصہ بھی آتا ہے لیکن پھر خود کو قابو میں رکھ کر میدان میں غصے کو قابو میں رکھنا ہوتا ہے۔

بابراعظم نے کہا کہ کھلاڑیوں کو اعتماد دینا بہت اہم چیز ہے ہم جتنا اپنے کھلاڑیوں کو حوصلہ دیں گے وہ اتنا ہی اچھا کھیل پیش کریں گے۔کھلاڑیوں کی بہترین پرفارمنس سے تناؤ کی صورتحال خوشی میں بدل جاتی ہے۔ بحیثیت کپتان دباؤ محسوس کرنے کے حوالے سے سوال پر بابر نے کہا کہ یہ ایک چیلنج ہے اور ہمیں چیلنجز کے لیے ہر وقت تیار رہنا چاہیے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے مجھ پر اعتماد کا اظہار کیا اور یقیناً اس بارے میں سوچ کر ہی فیصلہ کیا ہو گا اور میں بھی اس ذمے داری کے لیے تیار ہوں۔
بابر اعظم نے کپتان کی ذمے داری ملنے کے باوجود اپنے انداز میں کھیلنے کا سلسلہ جاری رکھنے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ قیادت اور بیٹنگ میں بہت فرق ہے، مجھے نہیں لگتا کہ میری بیٹنگ پر کوئی فرق پڑے گا۔جب میں بیٹنگ کرتا ہوں تو میری توجہ صرف بیٹنگ پر ہوتی ہے اور اس وقت میں کسی اور چیز کے بارے میں نہیں سوچتا، بیٹنگ کے بعد ہی میں سوچوں گا کہ مجھے ٹیم سے کس طرح کارکردگی لینی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے پتہ ہے کہ کپتان بنتے ہی ہم ہر میچ جیتنے نہیں لگیں گے، اس میں اتار چڑھاؤ آئیں گے، اس میں غلطیاں بھی ہوں گی اور اچھی کارکردگی بھی ہو گی، یہ سب کھیل کا حصہ ہے۔بابر اعظم نے ون ڈے اور ٹی20 فارمیٹ میں قومی ٹیم کی رینکنگ بہتر بنانے کا عزم بھی ظاہر کیا۔

بابراعظم نے وضاحت کی کہ مصباح الحق ٹیم کے فیصلے کرتے ہیں اس بات میں کوئی صداقت نہیں انہوں نے بتایا کہ وہ مصباح الحق سے بطور ہیڈ کوچ رائے لیتے ہیں اورآئندہ بطور کپتان بھی وہ ہیڈ کوچ سے رائے لیں گے اور اگر وہ رائے اچھی ہوگی تو اس پر عمل بھی کریں گے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >