شائقین کے بغیر کرکٹ کھیلنا ایسے ہے جیسے کوئی بغیر دلہن کے شادی کر رہا ہو،شعیب اختر

شائقین کے بغیر کرکٹ کھیلنا ایسے ہے جیسے کوئی بغیر دلہن کے شادی کر رہا ہو،شعیب اختر

تفصیلات کے مطابق پاکستان کے سابق مایہ ناز فاسٹ بولر شعیب اختر نے کرونا وائرس کے باعث بند دروازوں کے پیچھے کھیلی جانے والی کرکٹ کی خبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ شائقین کے بغیر خالی اسٹیڈیم میں کرکٹ کھیلنا ایسے ہے جیسے کوئی بغیر دلہن کے شادی کر رہا ہو۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق راولپنڈی ایکسپریس شعیب اختر نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کرکٹ کے علاوہ اگرچہ اب کچھ کھیل جیسے فٹبال اور موٹر کار اسپورٹس جیسے کھیل جو کرونا وائرس کی وبا کی وجہ سے بند دروازوں کے پیچھے دوبارہ سے شروع ہوگئے ہیں۔ لیکن کرکٹ تاحال شروع نہیں ہوسکی جبکہ انتظامیہ کی جانب سے شائقین کے بغیر بند دروازوں کے پیچھے کرکٹ کی بحالی کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ ایک سال میں کورونا کی صورتحال معمول پر آجائے گی،لہذا خالی سٹیڈیمز میں کرکٹ کھیلنا بورڈ کے لیے قابل عمل اور پائیدار ہوسکتا ہے لیکن مجھے نہیں لگتا کہ ہم اس کی مارکیٹنگ کرسکتے ہیں۔ہمیں کھیلنے کے لیے ہجوم کی ضرورت ہے جبکہ شائقین کے بغیر سٹیڈیم میں کرکٹ کھیلنا ایسے ہے جیسے کوئی بغیر دلہن کے شادی کر رہا ہو۔

خیال رہے کہ بابر اعظم کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ ہم یو اے ای میں خالی سٹیڈیمز میں میچز کھیل چکے ہیں ہمیں کوئی پریشانی نہیں ہوگی۔جبکہ انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کا کہنا تھا کہ بند دروازوں کے پیچھے کھیل کر جوش اور ولولہ پیدا کرنا کھلاڑیوں کے لیے مشکل ہو گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >