پہلی بار جہاز میں بیٹھا تو پتا نہیں تھا کہ بیلٹ کیسے لگاتے ہیں،وسیم اکرم

سابق کرکٹر وسیم اکرم سے شعیب اختر نے کیریئر کے آغاز میں مزاحیہ واقعات سے متعلق سوالات پوچھے تو وسیم اکرم کا کہنا تھا کہ پہلی بار جہاز میں بیٹھا توبیلٹ لگانی بھی نہیں آتی تھی۔

سوشل میڈیا پر لائیو سیشن کےدوران دونوں سابق کھلاڑیوں کے درمیان ہلکی پھلکی گفتگو ہوئی جس میں وسیم اکرم نے اپنے کیریئر کے آغاز کے کچھ یادگار واقعات کا ذکر کیا۔انہوں نے بتایا کہ پہلی بار جب میں جہاز میں بیٹھ کر لاہور سے کراچی جارہا تھا ،میرے ساتھ 3 کھلاڑی اور تھے، رمیز راجہ، محسن کمال اور سلطان رانا، جب جہاز میں کھانا پیش کیا گیا تو میں نے پوچھا کہ اس کا بل کتنا آئے گا، تو ساتھی کھلاڑیوں نے بتایا کہ یہ مفت ہوتا ہے۔

وسیم اکرم نے کہا کہ جب میں پہلی بار نیوزی لینڈ گیا تو مجھے یہ بھی نہیں پتا تھا کہ سٹیک کیا ہوتا ہے۔ وہاں دیسی کھانا تو ملا نہیں تو جاوید بھائی نے مجھے سٹیک کا بتایا ۔ شعیب اختر نے سوال کیا کہ انگلینڈ میں پہلی بار گاڑی چلانے کا تجربہ شیئر کریں ،تو وسیم اکرم نے جواب دیا کہ مجھے میپ کی بالکل سمجھ نہیں آتی تھی مجھے وہاں برانڈ نیو والرو گاڑی ملی میں بہت خوش ہوا کہ نئی گاڑی ملی ہے بعد میں پتا چلا کہ یہ بوڑھوں کی گاڑی ہوتی ہے۔میں گاڑی لے کر نکلا اور گم گیا کافی دیر گھومنے کے بعد مجھے ایک فون بوتھ نظر آیا میں نے فون کیا پھر مجھے لینے کیلئے لوگ آئے۔

انہوں نے بتایا کہ سب سے بڑی پریشانی کاؤنٹی کرکٹ کھیلتے ہوئے مجھے کپڑے دھونے میں پیش آئی،کبھی پہلے دھوئے نہیں تھے پہلی بار دھونے پڑے تو سمجھ ہی نہ آئے۔ مانچسٹر میرا دوسرا گھر ہے، مجھے سب سے زیادہ یاد اسی جگہ کی آتی ہے اس بحران میں مجھے اور میری بیوی کو یہی پریشانی ہے کہ ہم انگلینڈ نہیں جا پائیں گے۔

دونوں کھلاڑیوں نے میٹھے کی ایک ڈش تیار کی اور آخر میں وسیم اکرم نے اعجاز اسلم اور شعیب اختر نے فیصل قریشی کو نامزد کیا کہ اب وہ یہ ڈیزرٹ تیار کریں ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >