"وہ دونوں بے بس ہیں”،شاہد آفریدی کا ہربھجن اور یوراج سنگھ کو جواب

تفصیلات کے مطابق پاکستان کے سابق مایہ ناز آل راؤنڈر شاہد خان آفریدی کا سابق بھارتی کرکٹرز ہربھجن سنگھ اور یوراج سنگھ کی جانب سے اپنی مزید حمایت نہ کرنے کے اعلان پر کہنا تھا کہ میرے خیال میں دونوں سابق کھلاڑیوں نے بھارتی عوام کے شدید دباؤ اور ان کو راضی کرنے کے لیے مجھ پر تنقید کی ہے۔ جس پر شاہد آفریدی نے خود پر تنقید کرنے پر دونوں سابق کھلاڑیوں کو بے بس قرار دے دیا ہے۔

دونوں سابق بھارتی کھلاڑیوں کی جانب سے تنقید کئے جانے کے باوجود شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ میں ان دونوں سابق کھلاڑیوں کا شکرگزار ہوں کیونکہ انہوں نے کرونا وائرس کے خلاف لڑنے کے لیے میری فاؤنڈیشن کی حمایت کی تھی۔ آفریدی نے ایک مقامی نیوز چینل پر کہا ، میں اپنی فاؤنڈیشن کی حمایت کرنے پر ہربھجن اور یوراج کا شکر گزار رہوں گا۔

ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد آفریدی کا مزید کہنا تھا کہ یہاں اصل مسئلہ یہ نہیں کہ انہوں نے مجھ پر تنقید کی ہے اصل مسئلہ یہ ہے کہ وہ اس ملک میں رہتے ہیں جہاں کے لوگ ہماری تعریف سننا اور کرنا پسند نہیں کرتے، وہ بے بس ہیں۔ وہ جانتے ہیں کہ ان کے ملک میں لوگوں پر ظلم کیا جارہا ہے، تاہم اس پر میں مزید کچھ نہیں کہوں گا۔

خیال رہے کہ رواں ماہ کے شروع میں آزاد جموں کشمیر میں آرٹیکل 370 کے خاتمے اور نریندر مودی کے حالیہ اٹھائے گئے بھارتی مسلمانوں کے خلاف اقدامات پر شاہد آفریدی کے تنقید کرنے پر سابق بھارتی کرکٹرز ہربھجن سنگھ اور یوراج سنگھ نے شاہد خان آفریدی کی مزید حمایت نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ہربھجن سنگھ نے کچھ روز قبل ٹویٹر پر اپنے جاری پیغام میں شاہد آفریدی کی آئندہ حمایت نہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ ” شاہد آفریدی اب میرے مزید دوست نہیں رہے، کیوں کہ انہوں نے میرے ملک اور وزیراعظم کا مذاق اڑایا ہے، یوراج اور میں نے انسانیت کی بنیاد پر اس کی حمایت کی اور اس کا شکر گزار ہونے کی بجائے اس نے ہمیں پیچھے ہٹا دیا۔ میں اب کبھی بھی ان کی حمایت نہیں کروں گا اور نہ ہی اب ان کے لیے کوئی ویڈیو پوسٹ کروں گا”۔

یووراج نے ٹویٹ کیا کہ ” شاہد آفریدی نے ہمارے وزیر اعظم نریندر مودی پر جو حال ہی میں تبصرے کیے ہیں ہمیں ان سے مایوسی ہوئی ہے، بطور ایک ہندوستانی میں اپنی وزیراعظم کے خلاف کسی کی تنقید نہیں سن سکتا اسی لئے میں اب سے شاہد خان آفریدی کی فاؤنڈیشن کی مزید حمایت نہیں کروں گا”۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >