ورلڈ کپ2011 فکس ہونے کے الزام پر سنگا کارا اور جے وردھنے کا سخت ردعمل

گزشتہ روز سابق وزیر کھیل سری لنکا مہندانندا آلوتھگامگے کی جانب سے الزام سامنے آیا کہ 2011 کا کرکٹ ورلڈ کپ فکس تھا انہوں نے کہا کہ سری لنکن کرکٹ ٹیم نے 2011 ورلڈ کپ کا فائنل بیچ دیا تھا انہوں نے کہا کہ ہم نے2011 کا کرکٹ ورلڈ کپ بیچا حالانکہ تب میں وزیر کھیل تھا۔

مہیندانندا کا جو اس وقت وزیر کھیل تھے اب وہ سری لنکا کے وزیر توانائی ہیں ان کا کہنا تھا کہ میں یہ راز افشا نہیں کرنا چاہتا تھا، ہم 2011 میں جیت کے قریب تھے، مگر ہم نے وہ میچ بیچ دیا، مجھے لگتا ہے کہ مجھے اس بارے میں بات کرلینی چاہیے، میں کھلاڑیوں کے نام نہیں لیتا مگر کچھ لوگ اس ڈیل کا حصہ تھے۔

ان الزامات کے بعد سابق سری لنکن کپتان کمار سنگاکارا اور سری لنکن کرکٹر مہیلا جے وردنے نے ورلڈ کپ 2011 کا فائنل فکسڈ ہونے کے ثبوت مانگ لیے۔ 2011 کے میگا ایونٹ میں کپتان سنگا کارا نے کہا کہ سب سے بہتر بات الزامات کی تہہ میں جانا ہے، محض الزام تراشی کر دینا ہی سب کچھ نہیں ہوتا بلکہ اس کے ثبوت بھی دیئے جانے چاہیئں۔

اس سے قبل سابق سری لنکن کپتان رانا ٹنگا جو اس میچ کے کمنٹیٹر تھے انہوں نے تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں اس وقت کوئی بھی راز شیئر نہیں کرسکتا، مگر میں ایک روز ایسا ضرور کروں گا، اس کی تحقیقات ضرور ہونی چاہیے، کھلاڑیوں کو ایسا گند چھپانا نہیں چاہیے۔

سری لنکا نے اس میچ میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 50 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان میں 274 رنز بنائے تھے جبکہ بھارت کی اننگز کے شروع میں ہی سچن ٹنڈولکر کو پویلین لوٹا کر سری لنکن ٹیم ایک مضبوط پوزیشن میں آگئی تھی، لیکن گوتم گھمبیر اور مہندر سنگھ دھونی نے ڈرامائی انداز میں میچ کی صورتحال کو بدلا اور 6 وکٹوں سے یہ میچ جیت لیا تھا۔

اس میچ میں مہیلا جے وردھنے نے 88 گیندوں پر103 رنز جبکہ کمارسنگارا نے 48 رنز کھیلی تھی


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >