آئی پی ایل کو880 کروڑکا جھٹکا،چینی کمپنی کا آئی پی ایل کی سپانسرشپ سے انکار

چینی کمپنی ٹائٹل سپانسر شپ سے دستبردار، آئی پی ایل کو880 کروڑ کا جھٹکا

بی سی سی آئی نے آئی پی ایل کے 13واں ایڈیشن متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں 19 ستمبر سے 10 نومبر تک منعقد کرنے کا اعلان کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بی سی سی آئی (بھارتی کرکٹ بورڈ) ٹائٹل سپانسرز کو منانے میں ناکام رہی اور چینی کمپنی ٹائٹل سپانسر شپ سے دستبردار ہو گئی۔

خیال رہے کہ انڈین پریمئیر لیگ کو ماضی میں معروف چینی موبائل کمپنی VIVOسپانسر کرتی رہی ہے۔ اس بار اس کمپنی نے آئی پی ایل کو سپانسر کرنے سے انکار کردیا ہے جس کی وجہ سے بھارتی کرکٹ بورڈ کو پریشانی کا سامنا ہے

بھارت اور چین کے مابین لداخ کے مقام پر جھڑپوں کے سلسلے میں صورتحال کشیدہ ہے جس کے نتیجے میں بھارت نے 59 چینی ایپلی کیشنز پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔

موبائل ایپلی کیشنز پر پابندی کے حوالے سے بی جے پی حکومت کی جانب سے دیئے گئے بیان میں کہا گیا تھ کہ ملکی خود مختاری، سالمیت ، دفاع کے لیے یہ قدم اٹھایا گیا ہے اور 130 کروڑ بھارتیوں کے ذاتی نوعیت کے ڈیٹا کی حفاظت کے لیے یہ قدم اٹھایا گیا ہے۔

بھارت نے جن موبائل ایپس پر پابندی عائد کی ہے ان میں ٹک ٹاک، شیئراِٹ، یوسی براؤزر، کلیش آف کنگز، بیوٹی پلس، ویگو ویڈو، ڈی یو براؤزر، لائکی، وِڈ میٹ سمیت 59 ایپس شامل ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >