ثمن ذوالفقار پاکستان کی پہلی خاتون کرکٹ میچ ریفری بن گئیں

ثمن ذوالفقار پاکستان کی پہلی خاتون کرکٹ میچ ریفری بن گئیں

ثمن ذوالفقار کا شمار پاکستان میں نئی تاریخ رقم کرنے والی خواتین میں ہوتا ہے ۔پاکستان کرکٹ بورڈ نے حال ہی میں ڈومیسٹک کرکٹ سیزن 2020۔21 کے لیے آفیشلز کا اعلان کیا ہے، ثمن ذوالفقار ڈویلپمنٹ پینل میں شامل واحد خاتون میچ ریفری ہیں۔

قصور کے مشہور قصبے الہ آباد سے تعلق رکھنے والی ملک کی پہلی خاتون میچ ریفری ثمن ذوالفقار اپنا شوق پورا کرنے کے لیے کرکٹ میچ ریفری کے شعبے سے وابستہ ہیں ۔ ثمن ذوالفقار ایک بیٹی کی ماں ہیں اور قصور میں اپنے سسرال کے ہاں رہائش پذیر ہیں۔

ثمن ذوالفقار نے دوران تعلیم کرکٹ کھیلی اور سپورٹس سائنسز میں ماسٹرز کیا ، اسکے بعد ایمپائرنگ اور میچ ریفری کے کورسز کئے۔

پاکستان میں پہلی خاتون میچ ریفری ثمن ذوالفقار کاکہنا ہے کہ ملک میں کرکٹ کی پہلی میچ ریفری بننا میرے لیے اعزاز ہے، یہ موقع دینے پر پی سی بی کی شکر گزار ہوں۔

ثمن ذوالفقار نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ان کا اگلا ہدف پی ایس ایل اور انٹر نیشنل میچز سپر وائز کرنا ہے۔

ان کاکہنا ہے کہ پی سی بی خواتین کے لیے مواقع فراہم کر رہا ہے اور اس سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >