وزیراعظم عمران خان نے سابق کرکٹرز کی تجویز اور مطالبہ مسترد کردیا

قومی کرکٹ ٹیم کے موجودہ اور سابق کپتان نے اسلام آباد میں وزیراعظم ہاؤس میں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی، جس میں انہوں نے ڈومیسٹک کرکٹ کے نئے ڈھانچے پر گفتگو کی اور ڈومیسٹک کرکٹ میں ڈیپارٹمنٹس کی بحالی کامطالبہ رکھا۔

وزیر اعظم سے ملاقات میں سابق کرکٹرز نے کہا کہ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کو دوبارہ سے بحال کیا جائے کیوں کہ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کے ہاتھ میں سے مقامی کرکٹرز کی بہت بڑی تعداد بے روزگار ہو چکی ہے۔

خبر ساز رائے کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ملاقات کرنے والے سابق کرکٹرز کی ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کی بحالی کی تجویز اور مطالبہ مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پرانا ڈومیسٹک اسٹرکچر ختم ہونے سے پیدا ہونے والی مشکلات کا اندازہ ہے، ریجنل کرکٹ سب سے بہترین ڈومیسٹک اسٹرکچر ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا سابق کرکٹرز کی تجویز مسترد کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اگر ملک میں کرکٹ کی صورتحال کو بہتر کرنا ہے تو ڈومیسٹک ریجن کرکٹ بہترین حل ہے، ہمیں یہ سمجھنا ہو گا کہ جب نظام بدلتا ہے تو نتائج ایک دم سے نہیں آتے، نئے ڈومیسٹک اسٹرکچر سے حقیقی ٹیلنٹ اوپر آئے گا۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اتنا ٹیلنٹ دنیا کے کسی ملک میں نہیں دیکھا، کلب کرکٹ سے براہ راست کھلاڑی قومی ٹیم میں شامل ہوتے ہیں، اس ٹیلنٹ کو اوپر لانے کے لیے ایک بہتر سسٹم کی ضرورت ہے، جتنی مقابلے کی فضا ہوگی، اتنے ہی بہترین کرکٹرز سامنے آئیں گے جب کہ ایسا سسٹم آسٹریلیا میں نظر آتا ہے۔

دریں اثنا وزیراعظم عمران خان کا اس سے قبل پی سی بی اور پی ٹی وی میں ڈومیسٹک کے نشریاتی حقوق کے معاہدے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اگر ہم کرکٹ کے اسٹرکچر کو ٹھیک کر لیں تو ہمارا کوئی مقابلہ نہیں کر سکتا، جب بھی کرکٹ کے اسٹرکچر میں اصلاحات کی جاتی ہیں تو مشکلات درپیش ہوتی ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >