عالمی نمبر1بابراعظم بمقابلہ ویرات کوہلی،کیا واقعی ان کا موازنہ کیا جا سکتا ہے؟

ون ڈے رینکنگ میں پہلے نمبر پر آنے والے پاکستانی بلے باز کپتان بابر اعظم نے اس مقام کیلئے بہت محنت کی

ون ڈے کرکٹ کی عالمی رینکنگ میں پہلے نمبر پر آنے والے پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے اب تک 56.83 کی اوسط سے3ہزار808 رنز بنائے ہیں، ان کا اسٹرائیک ریٹ 88.70 رہا، اس دوران انہوں نے 13 سنچریاں اور 17 بار 50 یا اس سے زائد اسکور بنایا، ان کا زیادہ سے زیادہ اسکور 125 ناٹ آؤٹ رہا۔

ان کی ہر فیلڈ کا بھارتی بلے باز ویرات کوہلی کے ساتھ موازنہ کیا جا رہا ہے مگر کیا واقعی ان کا موازنہ کیا جا سکتا ہے؟

اس کا جواب ہے نہیں کیونکہ ویرات کوہلی نے پہلی 78 اننگز میں 45.58 کی اوسط سے 3ہزار100 رنز بنائے، ان کا اسٹرائیک ریٹ 83.26 رہا، انہوں نے 8 سنچریاں اور 20 ففٹیز بنائیں، اور کوہلی کا زیادہ سے زیادہ اسکور 118 ناٹ آؤٹ رہا۔

ون ڈے رینکنگ میں پہلے نمبر پر آنے والے پاکستانی بلے باز کپتان بابر اعظم نے اس مقام کیلئے بہت محنت کی

اب اگر دیکھا جائے تو کپتان بابر اعظم اپنی ففٹیز کی تعداد کے سوا ہر معاملے میں ویرات کوہلی سے آگے ہیں، اسی غیر معمولی کارکردگی کی بنیاد پر وہ دنیا بھر کے کرکٹرز میں سے بہترین کھلاڑی قرار پائے ہیں اور اب پہلے نمبر پر قبضہ کیے ہوئے ہیں۔ واضح رہے کہ بابر اعظم نے ابھی تک 80 ون ڈے میچز میں 78 اننگز کھیلی ہیں۔

جبکہ دوسری جانب ویرات کوہلی نے مجموعی طور پر 245اننگز میں 59.07 کی اوسط سے 12ہزار169 رنز اسکور کیے ہیں اور43 سنچریاں بنا چکے ہیں۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ بابراعظم کو ابھی اس پایہ کا کرکٹر بننے کیلئے مزید محنت درکار ہو گی۔

بابار اعظم ٹی20 کرکٹ میں بھی تیز رفتاری کے ساتھ 2ہزار رنز بنانے کا ویرات کوہلی کا ریکارڈ توڑنے کے قریب ہیں۔

ویرات کوہلی نے کم ازکم اننگز میں 2ہزار رنز اسکور کرنے کا ریکارڈ بنا رکھا ہے انہوں نے یہ ریکارڈ 56 میچز کھیل کر انجام دیا تھا جبکہ بابر اعظم کو یہ ریکارڈ بنانے کے لیے اگلے7 ٹی20 میچز میں صرف84 رنز درکار ہیں۔

  • It is not just about Babar’s performances until now. It is all about his development and form in the coming years which will decide the comparison. Right now Kohli is a much bigger player.
    A few years back, there was a time when Azhar Ali had similar stats in tests as of Kohli but then everyone saw Kohli getting better and better and Azhar Ali stayed there where he was.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >