کشمیر پریمیئر لیگ : بھارت کی ایک اور سازش بےنقاب ، بھارت کا آئی سی سی کو خط

بھارتی کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) کو کشمیر پریمیئر لیگ (کے پی ایل) سے مروڑ اٹھنے لگے اور بھارت ایک بار پھر مسلسل سازشیں کرنے میں مصروف ہو گیا۔ بھارتی کرکٹ بورڈ نے کشمیر پریمئیر لیگ کو منظور نہ کرنے کیلئے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کو خط لکھ دیا۔

بھارتی بورڈ نے آئی سی سی کے رکن ممالک کو بھی کشمیر لیگ کے بائیکاٹ کا کہا ہے۔ پی سی بی نے کشمیر پریمیئر لیگ کے لیے این او سی جاری کر رکھا ہے جس کا آئی سی سی کو بھی علم ہے۔ آئی سی سی نے ممبرممالک کو کے پی ایل میں شرکت کی اجازت دی ہے اور منظور شدہ کشمیر پریمیئر لیگ پر آئی سی سی کو کوئی اعتراض بھی نہیں ہے۔ کشمیر پریمیئر لیگ میں 5 سال سے زائد عرصے سے ریٹائرڈ کھلاڑیوں کو کھیلنےکی اجازت ہے۔

اس سے قبل جنوبی افریقہ کے سابق کھلاڑی ہرشل گبز نے کہا تھا کہ بی سی سی آئی کے سیکرٹری جنرل جے شنکر نے انہیں کے پی ایل میں شرکت کرنے پر دھمکیاں دی ہیں، جنوبی افریقہ کے سابق بلے باز نے الزام عائد کیا کہ بی سی سی آئی انہیں کے پی ایل کے پہلے سیزن میں شرکت سے روکنے اور پاکستان کے ساتھ اپنا سیاسی ایجنڈا بیچ میں لانے کی کوشش کر رہا ہے۔

ٹوئٹر پر کے پی ایل کی فرنچائز اوورسیز واریئرز کے رکن ہرشل گبز نے کہا تھا کہ بی سی سی آئی نے انہیں دھمکی دی ہے کہ اگر انہوں نے کشمیر پریمیئر لیگ میں شرکت کی تو انہیں بھارت میں داخل نہیں ہونے دیا جائے گا۔ بی سی سی آئی مجھے دھمکیاں دے رہا ہے کہ وہ مجھے کرکٹ کے حوالے سے کسی بھی معاملےمیں بھارت میں داخل نہیں ہونے دے گا، یہ مضحکہ خیز ہے۔

دوسری جانب آئی سی سی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کشمیر پریمیئر لیگ کو پاکستان کرکٹ بورڈ نے منظور کیا ہے، کسی ایسی لیگ کی منظوری دینا جو انٹرنیشنل نہ ہو یہ آئی سی سی کا دائرہ اختیار نہیں۔ یاد رہے کہ گزشتہ دنوں بھارتی کرکٹ بورڈ کی دھمکی کے باعث ٹورنامنٹ میں شریک تمام غیر ملکی کرکٹرز کشمیر پریمیئر لیگ سے دستبردار ہوگئے تھے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >